دریائے سواں بپھر گیا، پانی قریبی آبادیوں اورنجی یونیورسٹی میں داخل

دریائے سواں بپھر گیا، پانی قریبی آبادیوں اورنجی یونیورسٹی میں داخل
دریائے سواں بپھر گیا، پانی قریبی آبادیوں اورنجی یونیورسٹی میں داخل

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ملک بھرمیں مون سون کانیاسلسلہ موسلادھاربارشیں لےکرآیاہےجس کے باعث دریاں اور ندی نالوں میں طغیانی آگئی ہے،موسلادھاربارشوں سےدریائےسواں بپھر گیااورپانی قریبی آبادیوں اورنجی یونیورسٹی میں بھی داخل ہوگیا،بپھرا دریائےسواں چھوٹے پل بھی اپنے ساتھ بہا لے گیا ہے جبکہ پاک فوج کی امدادی ٹیمیں بھی متاثرہ علاقوں میں پہنچ گئی ہیں،کسی بھی مشکل اور پریشان کن صورت حال سے نمٹنے کے لیے ریسکیو1122 اور سول ڈیفنس کو ہائی الرٹ کردیا گیا ہے۔

نجی ٹی وی کےمطابق اسلام آبادکےنواحی علاقے سہالہ اور راولپنڈی کی تحصیل کہوٹہ میں دریائے سواں نے تباہی مچا دی ہے۔دریائے سواں کا پانی قریبی دیہات میں داخل ہوگیا اور قریبی علاقوں مستان نگر، ڈھوک درزیاں، عظیم ٹان اور نجی یونیورسٹی میں بھی پانی بھرگیا ہے۔ کلرسیداں کے علاقے نالہ کانسی پل سیلابی صورت حال کے پیش نظر ٹریفک کی آمدورفت کے لیے بند کردیا گیا ہے۔ پل پر پانی کا بہاؤ  تیز ہونے کے باعث 10 افراد اور گاڑیاں پھنس گئیں، ریسکیو حکام نے پھنسے افراد کوبحفاظت بچا لیا۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -