زیتون کتنا قدیم پھل ہے؟ تحقیق نے سائنسدانوں کو بھی حیران کر دیا

زیتون کتنا قدیم پھل ہے؟ تحقیق نے سائنسدانوں کو بھی حیران کر دیا
زیتون کتنا قدیم پھل ہے؟ تحقیق نے سائنسدانوں کو بھی حیران کر دیا

  


تل ابیب (نیوز ڈیسک) زیتون کے بارے میں یہ بات تو عام جانی جاتی ہے کہ یہ زمانہ قدیم سے زمین پر موجود ہے لیکن یہ کوئی نہیں جانتا تھا کہ آج سے 8,000 سال قبل بھی انسان زیتون کے درخت اگا کر ان کا پھل اور تیل استعمال کر رہے تھے۔ یہ دریافت حال ہی میں اسرائیلی سائنسدانوں نے کی ہے جسے جان کر ماہرین نباتات بھی حیران ہیں۔

اپنی بیوی کو حاملہ بنانے کے لیے بھارتی مزدور کا 10 سالہ بچے کے ساتھ دل دہلا دینے والا فعل

ماہرین آثار قدیمہ نے Ein Zippori کے علاقہ میں 8,000 سال پرانے برتن دریافت کئے اور ان میں کسی چیز کے ذخیرہ کئے جانے کے آثار بھی ملے۔ سائنسدانوں نے جدید ترین ٹیکنالوجی کے استعمال سے معلوم کیا کہ ان برتنوں میں زیتون کا پھل اور تیل ذخیرہ کیا جاتا تھا۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ زمانہ بابل و نینوا کی تہذیب سے بھی پہلے کا تھا اور تحقیقات سے یہ شواہد بھی ملے ہیں کہ اس دور میں بھی انسان زیتون کے درخت کاشت کر رہے تھے۔ تاریخ دانوں کایہ بھی کہنا ہے کہ اس دور میں زیتون کو مذہبی اہمیت حاصل تھی، اگرچہ یہ مذہب اسلام، عیسائیت یا یہودیت سے قبل کے عقائد پر مشتمل تھا اور وہ لوگ زیتون کو خوشحالی، خوش بختی اور ذرخیزی کی علامت سمجھتے تھے۔

270کلو وزنی خاتون کی دکھ بھر ی داستان

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...