کشمیرکی متنازعہ حیثیت ختم کرنے کی کوششیں بے معنی ہیں‘ تحریک حریت

کشمیرکی متنازعہ حیثیت ختم کرنے کی کوششیں بے معنی ہیں‘ تحریک حریت

 سرینگر(کے پی آئی)تحریک حریت کے مرکزی اور ضلعی لیڈران نے مختلف مساجد میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ جموں وکشمیر کی موجودہ صورتحال انتہائی نازک ہی۔ بھارت اپنے تمام تر حربے استعمال میں لاکر جدوجہدِ آزادی کو ختم کرنا چاہتا ہی۔ شعبہ دعوت وتبلیغ کے سیکریٹری حافظ بشیر احمد فاروقی نے ٹارہامہ ٹنگمرگ، میر حفیظ اللہ نے آرونی اسلام آباد، راجہ معراج الدین نے گاندربل اور معراج الدین ربانی نے سوئٹینگ میں عوامی اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت اور یہاں کے بھارت نواز سیاستدان جموں وکشمیر کی متنازعہ حیثیت کو ختم کرنے کی بے معنی اچھل کود جاری رکھے ہوئے ہیں، لیکن یہاں کے عوام کسی کو تحریک آزادی کے ساتھ کھلواڑ کرنے کی اجازت نہیں دیں گے ۔ جموں کشمیر کے عوام لاکھوں قربانیوں کے امین ہیں، صدرِ ضلع اسلام آباد میر حفیظ اللہ نے آرونی اسلام آباد میں پچھلے دنوں شہید ہونے والے شاہد الاسلام نے جموں کشمیر کی آزادی کی خاطر عزیمت کا راستہ اختیار کرتے ہوئے جام شہادت نوش کیا اور ان کی شہادت جموں کشمیر کے عوام کے کندھوں پر اس وقت تک قرض ہے جب تک نہ جموں کشمیر بھارت کے تسلط سے آزاد ہو۔ آرونی میں نماز جمعہ کے بعد ایک بڑا جلوس بھی صدرِ ضلع کی قیادت میں نکالا گیا اور یہ جلوس شاہد الاسلام کے گھر پر اختتام پذیر ہوا۔

مزید : عالمی منظر