جاپان فٹبال کوچ نے میچ فکسنگ الزامات کی تردید کردی

جاپان فٹبال کوچ نے میچ فکسنگ الزامات کی تردید کردی

ٹوکیو( آن لائن )جاپان کے کوچ ژواےئر ایگویرے نے ان الزامات کی تردید کردی ہے کہ وہ میچ فکسنگ سکینڈل کا حصہ تھے جس نے دنیائے فٹبال کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔سپین میں پراسکیوٹرز نے الزام عائد کیا ہے کہ 56سالہ ایگویرے اور چالیس دیگر افراد ایک لیگ میچ میں فکسنگ میں ملوث تھے،جس میں رےئل زارا گوزا نے لوینٹے کو 2-1سے شکست دی اور اس طرح وہ ٹورنامنٹ سے باہر ہونے سے بچ گئے۔میکسیکو کے سابق کوچ فروری میں ولنسیا کی ایک عدالت میں پیش ہو رہے ہیں،ان کیخلاف 2011ء میں سامنے آنے والے الزامات کی تحقیقات کی گئی ہیں جب وہ رےئل زاراگوزا کے منیجر تھے۔ایگویرے نے ٹوکیو میں ایک پریس کانفرنس جس کا جاپانی زبان میں ترجمہ کیا گیا کے دوران کہا کہ میں نے ہسپانوی فٹبال کے ساتھ 12سال گزارے،میں کسی قسم کی ایسی چیز میں ملوث نہیں رہا جو کہ اخلاقیات اور پیشہ وارانہ خدمات سے ہٹ کر ہو۔میں نے ایسی کوئی چیز وصول نہیں کی اور نہ ہی کسی چیز کیلئے کہا ہے،انہوں نے حکام کے ساتھ تعاون کا اعادہ کیا ہے۔استغاثہ کا الزام ہے کہ زاراگوزا نے مجموعی طور پر 965000یوروز(1.2ملین امریکی ڈالر) کی رقم اپنے کوچز،سٹاف اور کئی کھلاڑیوں کے بینک اکاؤنٹس میں جمع کرائی،جنہوں نے پھر یہ رقم رشوت کے طور پر لوینٹے کے کھلاڑیوں کو دی۔جاپان فٹبال ایسوسی ایشن(جے ایف اے) کا کہنا ہے کہ ایگویرے الزامات کے باوجود آئندہ ماہ آسٹریلیا میں ایشیاء کپ کیلئے بطور کوچ برقرار رہیں گے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی