سیکیورٹی خدشات کی بنیاد پر تعلیمی اداروں کی بندش غیر دانش مندانہ فیصلہ ہے، غلام عباس

سیکیورٹی خدشات کی بنیاد پر تعلیمی اداروں کی بندش غیر دانش مندانہ فیصلہ ہے، ...

لاہور (ایجوکیشن رپورٹر ) سیکیورٹی خدشات کی بنیاد پر 12 جنوری تک تعلیمی اداروں کی بندش غیر دانش مندانہ فیصلہ ہے حکومت سیکیورٹی فراہم کرنے کی بجائے تعلیمی ادارے بند کرکے طلبہ کا قیمتی وقت ضائع کررہی ہے ایسے غلط فیصلوں کو مسترد کرتے ہیں تعلیمی عمل فوری شروع کیا جائے اسلامی تحریک طلبہ پاکستان کے رہنماو¿ں غلام عباس صدیقی،شاہد نذیر،ذکی الدین ،محمد عدنان نے اپنے مشترکہ بیان میں پنجاب حکومت کی طرف سے سیکیورٹی خدشات کے باعث 12 جنوری تک تعطیلات کے اعلان پر اپنے ردعمل میں کہا ہے کہ قوم دہشت گردی کے خلاف ایک ہوچکی مگر حکمران تعلیمی ادارے بند کرکے ملک دشمنوں کو مثبت پیغام نہیں دے رہے ،ملک دشمنوں سے ڈرانے کی بجائے تعلیمی ادارے کھولے جائیں یہ مثبت اقدام ہوگا قوم ہر محاذپر ملک دشمنوں سے لڑنے کےلئے تیار ہے ایسے غلط فیصلوں سے غیرت مند،جرات مند پاکستانی قوم کے جذبات مجروح ہورہے ہیں، انہوں نے کہا کہ جرا¿ت مندانہ فیصلہ یہ ہوگا کہ حکومت فی الفور تعلیمی اداروں کو کھولنے کا اعلان کرے اور متحدہ طلبہ محاذ میں شامل طلبہ تنظیموں کے قائدین سے مشاورت کرکے تعلیمی اداروں کی سیکیورٹی کا بندوبست کرے ، انہوں نے صوبائی وزیر تعلیم کی طرف سے تین لاکھ رضاکار فورس کے قیام کا خیر مقدم کرتے ہوئے عملی اقدام اٹھانے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4