مانگا منڈی میں میڈیکل سٹوروں پر نشہ آور ادویات کی فروخت،کوئی پوچھنے والانہیں

مانگا منڈی میں میڈیکل سٹوروں پر نشہ آور ادویات کی فروخت،کوئی پوچھنے والانہیں

 مانگا منڈی (ملک ممتاز حسین)مانگا منڈی شہر اور اردگرد کی بستیوں شامکی بھٹیاں ،سندر اڈا،مراکہ کواٹر،تالاب سرائے ،مانگا گاؤں کیگلی محلوں میں بہت چمک دار میڈیکل سٹوروالے اپنے آپ کو ڈاکٹر ظاہر کرکے بلاامتیاز مریضوں کو نشہ آور ٹیکے اور ادویات دے رہے ہیں میڈیکل سٹوروں پر پرائیویٹ بنائے گئے ہسپتالوں پر مڈل پاس نہ کرنے والے 16سال سے کم عمر کے لڑکے سرعام انجکشن لگا رہے ہیں کوئی پوچھنے والانہیں بتایا گیا ہے دو نمبر ادویات کی وجہ سے شرح اموات میں بھی اصافہ لاتعداد گھرانوں کے چراغ گُل ہو چکے ہیں آئے روز نشہ اور انجکشن استعمال کرنے والوں کی تعداد میں بھی دن بدن اضافہ ہو رہا ہے جب کہ نشہ کے عادی افراد گھروں کی بجائے دوسرے گھروں سے سامان چرا کر فروحت کرکے اپنا نشہ پورا کرتے ہیں اس کے علاوہ سرکاری ہسپتال رورل ہیلتھ سنٹر مانگا منڈی میں مرد ڈاکٹر اور لیڈی ڈاکٹر کے غیر حاضر ہونے اور ہسپتال سے غریبوں کو ادویات نہ ملنے کی وجہ سے غریب افراد بازار سے میڈیکل سٹور سے مہنگی ادویات خرید نے پر مجبور ہیں مانگا منڈی کے شہریوں اور معززین علاقہ نے ڈی سی او لاہور، ای ڈی او محکمہ ہیلتھ اور وزیر اعلیٰ سے انڈر میٹرک بلا لائسنس میڈیکل سٹوروں کے مالکان کے خلاف اور منتھلیاں لینے والے افسران کے خلاف فوری سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1