شمالی کوریا نے امریکی صدر باراک اوباما کوبندر سے تشبیہ دیدی

شمالی کوریا نے امریکی صدر باراک اوباما کوبندر سے تشبیہ دیدی

پیانگ یانگ (نیوز ڈیسک) شمالی کوریا نے ملک میں انٹرنیٹ کی طویل بندش کو امریکی حملہ قرار دیتے ہوئے امریکا کے صدر باراک اوباما کو گرم مرطوب جنگلوں کا بندر قرار دے دیا ہے جو غیر ذمہ دارانہ حرکات کرنے کا عادی ہوچکا ہے۔ بین الاقوامی الیکٹرانک کمپنی سونی کے کمپیوٹر نیٹ ورک کی ہیکنگ کے بعد شمالی کوریا کا انٹرنیٹ مسلسل 10 سے 12 گھنٹوں کیلئے بند کردیا گیا اور بعد میں بھی وقفے وقفے سے بند ہوتا رہا۔اب شمالی کوریا کے نیشنل ڈیفنس کمیشن نے اسے امریکی حملہ قرار دے دیا ہے اور امریکی صدر کو اس کا ماسٹر مائنڈ قرار دیا ہے۔ شمالی کوریا کا کہنا ہے کہ امریکی صدر شائستگی اور بین الاقوامی تقاضوں کو نظر انداز کرتے ہوئے ایک خود مختار ملک کے خلاف قابل مزمت اقدامات کررہے ہیں۔ این ڈی سی شمالی کوریانے کہا کہ اوباما ہمیشہ الفاظ کا غلط چناو¿ کرتے ہیں اور جنگل میں رہنے والے بندر کی مانند حرکتیں کرتے ہیں۔دوسری جانب امریکی وائٹ ہاﺅس نے شمالی کوریا کے انٹرنیٹ کی بندش سے مکمل طور پر لاتعلقی کا اظہار کیا ہے۔

 شمالی کوریا تشبیہ

ف

مزید : علاقائی