بے نظیر بھٹو کے المناک قتل کی تحقیقات منظر عام پر لائی جائیں،لیاقت بلوچ

بے نظیر بھٹو کے المناک قتل کی تحقیقات منظر عام پر لائی جائیں،لیاقت بلوچ

لاہور(سٹاف رپورٹر)جماعت اسلامی پاکستان کے سیکرٹری جنرل اورسابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے اپنے ایک بیان میں کہاہے کہ بے نظیر بھٹو صرف سابق وزیر اعظم یا پی پی پی کی سربراہ ہی نہیں ، ملک کی صف اول کی اہم ترین رہنما تھیں ۔ بے نظیر بھٹو کے المناک ، وحشیانہ قتل کی واردات نے پاکستان ہی نہیں پوری دنیا کو سوگ میں مبتلا کر دیا تھا۔ یہ بھی قومی المیہ ہے کہ قومی قیادت کو سوچے سمجھے منصوبہ کے تحت منظر سے غائب کر دیا جاتاہے لیکن سہولت کار اور قاتل منظر عام پر نہیں لائے جاتے ۔ پوری قوم کے ساتھ ظلم ہے کہ جنرل پرویز مشرف اور آصف زرداری دور کے بعد اب نوازشریف کے دور اقتدار میں بھی بے نظیر بھٹو کے المناک قتل کی تحقیقات منظر عام پر نہیں آئیں۔لیاقت بلوچ نے کہاکہ بے نظیر بھٹو کی لیاقت باغ میں المناک واقعہ میں شہادت سے تین روز پہلے اے پی ڈی ایم کے وفد کے ساتھ اسلام آباد زرداری ہاﺅس میں ملاقات بہت اہم تھی ۔ اس وفد میں میاں نوازشریف ، محمد خان اچکزئی ، جاوید ہاشمی اور دیگر رہنما بھی موجود تھے ۔ قاضی حسین احمد اور عمران خان کے انتخابات سے بائیکاٹ نہ کرنے کے لیے بے نظیر بھٹو نے شاندار ، مدلل رائے سے سب کو لاجواب کر دیا تھا ۔ پی پی پی آج بڑے بحرانوں سے دوچار ہے ۔ حکومتوں میں رہ کر پی پی نے اپنی صلاحیت ثابت نہیں کی اسی وجہ سے آج اپنی اہمیت اور مقام گنوا رہی ہے ۔

تحقیقات

مزید : صفحہ آخر