دہشتگردی کو جڑ سے اکھاڑ پیھنکنے کیلئے فوج اور تمام قومی قیادت متحد ہو چکی ،سراج الحق

دہشتگردی کو جڑ سے اکھاڑ پیھنکنے کیلئے فوج اور تمام قومی قیادت متحد ہو چکی ...

                     لاہور(سٹاف رپورٹر)امیر جماعت اسلامی پاکستان سراج الحق نے کہا ہے کہ حالات کا تقاضا ہے کہ تمام جماعتیں مل کر قومی امن مارچ کریں ،ملک میں امن کا قیام اس وقت سب سے اہم قومی معاملہ ہے ، جماعت اسلامی سمیت تمام جمہوری جماعتوں نے فوجی عدالتوں کے فیصلے کو بہ امر مجبوری قبول کیا ہے فوجی عدالتوں کا قیام کوئی آئیڈیل صورتحال نہیں ،ملٹری کورٹس صرف دہشت گردی کے مقدمات کی سماعت کریں گی ،دہشت گردی سمیت تمام ملکی مسائل کا حل اسلامی نظام حکومت میں ہے۔ کوٹ رادھاکشن میں جب مسیحی میاں بیوی کو جلانے کا افسوسناک واقعہ رونما ہوا تھا میں سب سے پہلے وہاں پہنچا تھا اور غمزدہ خاندان کے ساتھ اظہار تعزیت کیا ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی کے ہیڈ کوارٹر منصورہ میں کام کرنے والے مسیحی کارکنوں اور ان کے خاندانوں کے اعزاز میں دیے گئے استقبالیہ سے خطاب اور بعد ازاںمیڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر سیکریٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ ،مولانا غیاث احمد اورمولانا جاوید قصوری بھی موجود تھے ۔سراج الحق نے کہا کہ حکومت اور تحریک انصاف کا مل بیٹھنا دونوں کے مفاد میں ہے ،پشاور کا واقعہ صرف پاکستان نہیں بلکہ عالم اسلام کے لئے ناقابل فراموش سانحہ ہے ،انہوں نے کہا کہ قانون اور آئین کی پامالی کا ذمہ دار بھی یہی اشرافیہ ہے ،ہم ایسا نظام چاہتے ہیں جس میں صدر پاکستان اور ایک چوکیدار کے حقوق برابر ہوں اور سب کیلئے ایک قانون ہو ۔

سراج الحق

مزید : صفحہ آخر