سورج مکھی کاشت کرکے فضاء کو آلودگی سے بچایا جاسکتا ہے،ترجمان

سورج مکھی کاشت کرکے فضاء کو آلودگی سے بچایا جاسکتا ہے،ترجمان

  

لاہور(اے پی پی )سورج مکھی کی کاشت کرکے فضا کو آلودگی سے بچایا جاسکتا ہے ، سورج مکھی کی کاشت کیلئے ابھی سے لائحہ عمل مرتب کیا جائے تو بہترین نتائج برآمد ہوسکتے ہیں،انسانی صحت کیلئے نقصان دہ سموگ دراصل فضاء میں معلق ان اجزاء پر مشتمل ہوتی ہے جن کی چوڑائی 2.5 مائیکرون یا اس سے کم ہوتی ہے،یہ معلق اجزاء انسانی جسم کے اندر داخل ہوکر آنکھ اور سانس کی مختلف بیماریوں کا باعث بنتے ہیں،ترجمان کے مطابق سموگ کے مسئلے سے نمٹنے کیلئے پوری دنیا میں جو اقدامات کئے جا رہے ہیں وہ بہت مہنگے ہیں،اس مسئلے کے حل کیلئے حال ہی میں انسٹیورٹ آف انڈسٹریل بائیو ٹیکنالوجی گورنمنٹ کالج یونیورسٹی لاہور کے طالبعلموں نے مختلف تجربات کے بعد یہ دریافت کیا ہے کہ سورج مکھی کے پودے لگانے سے سموگ پر قابو پایا جا سکتا ہے

،سورج مکھی کے پودے میں قدرتی طور پروہ خواص پائے جاتے ہیں جوسموگ کا باعث بننے والی فضائی آلودگی کے خاتمے میں مددگار ثابت ہوتے ہیں اور فضائی آلودگی کا سبب بننے والے عناصرکو جذب کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں،لہذا انسانی صحت کیلئے مفید اس پودے کی کاشت زیادہ سے زیادہ رقبہ پر یقینی بنانی چاہیے تاکہ سموگ کا خاتمہ ہوسکے،سورج مکھی کی کاشت کیلئے حکومت پنجاب کاشتکاروں کو کروڑوں روپے کی سبسڈی فراہم کررہی ہے تاکہ نہ صرف حکومت کے خوردنی تیل کا درآمدی بل کم ہو سکے بلکہ فضائی آلودگی کو بھی ختم کیاجاسکے۔

مزید :

کامرس -