اورنج ٹرین، محکمہ آرکیا لوجی نے خصوصی ہاٹ لائن قائم کر دی ، عوامی شکایات کا ازالہ کیا جائے گا

اورنج ٹرین، محکمہ آرکیا لوجی نے خصوصی ہاٹ لائن قائم کر دی ، عوامی شکایات کا ...

  

لاہور(جنرل رپورٹر ) وزیر اعلی پنجاب کے مشیر اور سٹیئرنگ کمیٹی کے چیئرمین خواجہ احمد حسان نے کہا ہے کہ تاریخی عمارتوں کے قریب میٹرو ٹرین منصوبے پر تعمیراتی کام کے دوران سپریم کورٹ کی ہدایات پر سختی سے عمل در آمد کیا جا رہا ہے‘اس سلسلے میں شہریوں کی شکایات پر فوری کارروائی کے لئے محکمہ آر کیا لوجی پنجاب نے خصوصی ہاٹ لائن بھی قائم کر دی ہے ۔ لاہور اورنج لائن منصوبہ ہر اعتبار سے بین الاقوامی معیار کے مطابق اور اس کا تعمیراتی کام دنیا کے ترقی یافتہ مالک کے ہم پلہ ہے جو پاکستان کے دوسرے شہروں میں ماس ٹرانزٹ سسٹم شروع کرنے کے لئے ایک قابل تقلید مثال ہے ۔ وہ گزشتہ روز اورنج لائن منصوبے پر پیش رفت کا جائزہ لینے کے سلسلے میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کر رہے تھے ۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ مجموعی طور پر منصوبے کا 80.4 فیصد تعمیراتی کام مکمل ہو چکا ہے ۔ڈیرہ گجراں سے چوبرجی تک پیکیج ون کا 88.3فیصد‘ چوبرجی سے علی ٹاؤن تک پیکیج ٹو کا 68فیصد ‘پیکیج تھری ڈپو کا 83.18فیصد جبکہ پیکیج فور سٹیبلینگ یارڈ کی تعمیر کا 84.45فیصد کام مکمل کیا جا چکا ہے ۔اس کے علاوہ منصوبے کا 33.8 فیصد الیکٹریکل ومکینیکل ورکس بھی مکمل کر لیا گیا ہے ۔ میٹرو سٹیشنوں کی فنشنگ کا کام شروع ہوچکا ہے جس پر زیادہ محنت اور وقت صرف ہوتا ہے ۔اجلاس کو بتایا گیا کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر 11تاریخی مقامات کے قریب اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کو مکمل کرنے کے لئے حفاظتی اقدامات مکمل کر لئے گئے ہیں۔شالامار باغ‘مقبرہ دائی انگہ‘مقبرہ زیب النساء‘بدھو کا آوااور گلابی باغ کے گرد بریسنگ کا عمل مکمل کر لیا گیا اور ان کو سبز کپڑے سے ڈھانپ دیا گیا ۔ چوبرجی عمارت کو بھی لوہے کے پائپوں سے بریسنگ کے بعد کپڑے سے ڈھانپا گیا ہے تا کہ انہیں تعمیراتی کام کے دوران اٹھنے والے گرد و غبار سے محفوظ رکھا جا سکے۔اجلاس کو بتایا گیا کہ اورنج لائن میٹرو ٹرین کے تعمیراتی کام کی وجہ سے سوئی ناردرن گیس کمپنی نے پنجاب اسمبلی ‘گورنر ہاؤس‘واپڈ ا ہاؤس سمیت شاہراہ قائد اعظم سے ملحقہ متعددعلاقوں میں 24گھنٹے گیس بند کرنے کا شیڈول جاری کر دیا ہے۔28دسمبر کی صبح دس بجے سے 29دسمبر کی صبح دس بجے تک جی پی او چوک میں 6انچ قطر کی پائپ لائن کی منتقلی کی وجہ سے مختلف علاقوں میں گیس بند رہے گی ۔ اس کے علاوہ پائپ لائن کی منتقلی کی وجہ سے لکشمی چوک‘ایبٹ روڈ‘نسبت روڈ‘پنجاب اسمبلی ‘گورنر ہاؤس‘ڈیوس روڈ‘حبیب اللہ روڈ ‘کوئنز روڈ‘لارنس روڈ اور مال روڈ سے ملحقہ آبادیوں میں گیس بند رہے گی ۔ خواجہ احمد حسان نے ہدایت کی کہ یہ منصوبہ پہلے ہی بہت زیادہ تاخیر کا شکار ہو چکا ہے ‘مزید دیر کی گنجائش نہیں ‘تمام متعلقہ محکمے مکمل ہم آہنگی کے ساتھ دن رات کام کر کے عوامی سہولت کے اس منصوبے کو جلد از جلد پایہ تکمیل تک پہنچائیں۔ منصوبے کا الیکٹریکل و مکینکل کام بھی تیز کیا جائے ۔ چینی کنٹریکٹر سی آر نورنکو کی لیبر کو 24گھنٹے سیکورٹی کور مہیا کرنے کے لئے ضروری نفری تعینات کر دی گئی ہے چنانچہ تین شفٹوں میں دن رات کام کیا جائے ۔ انہوں نے ہدایت کی کہ منصوبے پر عمل درآمد کے دوران شہریوں کی سہولت کو ہر دوسری چیز پر مقدم رکھا جائے ۔ آلودگی کم کرنے کے لئے تعمیراتی کام والے مقامات پر دن میں کم از کم دو مرتبہ پانی کا چھڑکاؤ یقینی بنایا جائے ۔ پیکیج ٹو میں شامل ملتان روڈ پر ٹریفک کا بہاؤ بہتر بنانے کے لئے سٹرکوں کی تعمیر کا کام جلد مکمل کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ موسم سرما کے دوران لیبر اور پراجیکٹ کی سیفٹی پر خصوصی توجہ دی جائے اور کسی بھی قسم کی ناگہانی صورتحال سے بچنے کے لئے لیبر کے رہائشی مقامات اور اورنج لائن سٹرکچر پر کسی بھی قسم کی آگ جلانے پر عائد پابندی پر سختی سے عمل درآمد کروایا جائے۔ اجلاس میں ایم پی اے چودھری شہباز ‘ چیف انجینئر ایل ڈی اے اسرار سعید‘ ایم ڈی واسا سید زاہد عزیز‘ جنرل منیجرآپریشنز پنجاب ماس ٹرانزٹ اتھارٹی سید عزیر شاہ‘ جنرل منیجر نیسپاک سلمان حفیظ اور حسیب خواجہ‘ چیف انجینئر ٹیپا سیف الرحمن اور لیسکو‘پی ٹی سی ایل ‘سوئی گیس ‘ ریلوے‘ ٹریفک پولیس ‘سول ڈیفنس‘ریسکیو1122 اور دیگر متعلقہ محکموں کے اعلی افسران کے علاوہ منصوبے کے چینی کنٹریکٹر سی آر نورنکو اور چائنہ انجینئر نگ کنسلٹنس کے نمائندوں اور مقامی کنٹریکٹرز نے شرکت کی ۔

اورنج ٹرین

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -