دنیا بھر میں قدرتی آفات کے باعث ہونیوالے نقصانات میں 60فیصد اضافہ

دنیا بھر میں قدرتی آفات کے باعث ہونیوالے نقصانات میں 60فیصد اضافہ

  

برلن (اے پی پی) دنیا بھر میں قدرتی آفات کے باعث ہونے والے نقصانات میں60 فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ سال رواں کے دوران قدرتی آفات سے ہونے والے نقصان کی مالیت 306 ارب ڈالر سے تجاوز کرگئی ہے۔ جرمنی میں کئے جانے والے سروے میں انکشاف ہوا ہے کہ موسمی تغیر کے باعث قدرتی آفات سے دنیا بھر میں ہونے والے اقتصادی نقصانات میں گزشتہ سال کی نسبت اضافہ ہوا ہے۔ زیوریخ کی مقامی بیمہ کمپنی سویس ری کا کہنا ہے کہ 2017ء میں دنیا بھر میں قدرتی آفات سے ہونے والے اقتصادی نقصانات کی مالیت 306 ارب ڈالرہو چکی ہے۔ بیمہ کمپنی نے تیزی سے ہونے والے اس اضافے کی وجوہات امریکہ کے جنوبی حصے میں آنے والے3 شدید سمندری طوفان اور کیلیفورنیا اور دیگر مغربی علاقوں کے جنگلات میں بڑے پیمانے پر لگنے والی آگ کو قرار دیا ہے۔ یاد رہے کہ یہ آگ ابھی بھی لگی ہوئی ہے۔کمپنی نے ستمبر میں وسطی میکسیکو میں آئے ایک بڑے زلزلے کا ذکر بھی کیا ہے۔ ان قدرتی آفات میں ہلاک شدگان اور گمشدہ افراد کی تعداد تقریبا گیارہ ہزار تک پہنچ چکی ہے۔کمپنی کا کہنا ہے کہ اس سال انشورنس کی مد میں قابل ادائیگی نقصانات کا تخمینہ 136 ارب ڈالر ہوگا۔ اس کا کہنا ہے کہ 1970ء کے بعد یہ تیسرا بڑا نقصان ہے۔ یاد رہے کہ مذکورہ اعدادوشمار کومرتب کرنے کا آغاز 1970ء سے ہوا تھا۔

مزید :

عالمی منظر -