پمزکو ذوالفقار بھٹو یونیورسٹی سے الگ کرنے کے ترمیمی بل کی منظوری

پمزکو ذوالفقار بھٹو یونیورسٹی سے الگ کرنے کے ترمیمی بل کی منظوری

اسلام آباد(این این آئی ) سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے کیبنٹ سیکرٹریٹ کا اجلاس چیئرمین کمیٹی سینیٹر طلحہ محمود کی صدارت میں پارلیمنٹ ہاؤس میں منعقد ہوا ۔ قائمہ کمیٹی نے بل کا تفصیل سے جائزہ لیا ۔وزیر کیڈ طارق فضل چوہدری نے کمیٹی کو بتایا کہ بل کو محنت سے بنایا گیا ہے ۔ یہ بل قومی اسمبلی سے پاس ہو چکا ہے ۔ اراکین کمیٹی کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے وزیر کیڈ نے یقین دہانی کرائی کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو یونیورسٹی کے قیام کیلئے زمین وفاقی حکومت الاٹ کرے گی جس پر اراکین کمیٹی کی رائے پر پمز ہسپتال کو شہید ذوالفقار علی بھٹو یونیورسٹی سے الگ کرنے کے تر میمی بل 2017 کی متفقہ منظوری دے دی گئی۔اراکین کمیٹی نے کہا کہ پمز ہسپتال اوریونیورسٹی کو الگ الگ ہونا چائیے۔ وزیر کیڈ نے یقین دہانی کرائی کہ ڈاکٹرز کو بھی ریگولر کیا جائے گاکسی کو واپس نہیں بھجوائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پمز میں کئی آسامیاں خالی ہیں ، ان پر ایف پی ایس سی کے ذریعے بھرتی ہوگی۔بھرتی کیلئے ضروری ہے کہ پمز اور یونیورسٹی کو الگ الگ کیا جائے۔سیکرٹری کیڈ نرگس گھیلو نے کہا کہ یونیورسٹی کو اراضی الاٹ کرنے کے لئے سی ڈی اے کو خط لکھ دیا گیا ہے ۔سینیٹر کلثوم پروین نے کہا کہ پمز ہسپتال کے کارڈک سینٹر کے ڈاکٹروں کو ریگولر کرنے کی بھی سفارش کی تھی جس پر کمیٹی نے فیصلہ کیا کہ قائمہ کمیٹی کے کل منعقد ہونے والے اجلاس میں معاملے کا تفصیل سے جائزہ لیا جائے گا ۔ چیئرمین کمیٹی سینیٹر طلحہ محمود نے کہا کہ سی ڈی اے کے ادارے میں مختلف محکموں سے ڈیپوٹیشن پر افسران لیے گئے ہیں جن کا متعلقہ کام سے کوئی واسطہ نہیں ہے ایسا طریقہ کار اختیار کیا جائے کہ ڈیپوٹیشن پر ایسے افسران لیے جائیں جو متعلقہ کام میں مہارت رکھتے ہوں ۔ بل اہمیت کا حامل ہے اس بل کو مزید موثر بنانے کے حوالے سے ایک ہفتے تک معاملہ موخر کیا جائے اراکین کمیٹی بھی بل کو زیادہ سے زیادہ موثر بنانے کیلئے تجاویز دیں گے ۔ جس پر قائمہ کمیٹی نے معاملہ ایک ہفتے تک موخر کر دیا ۔ قائمہ کمیٹی کے آج کے اجلاس میں سینیٹرزہدایت اللہ ، کامل علی آغا، کلثوم پروین ، حاجی سیف اللہ بنگش اور محمد اعظم خان سواتی کے علاوہ وزیرمملکت کیڈ ڈاکٹر طارق فضل چوہدری ، سیکرٹری کیڈ نرگس گھیلو ، ایڈیشنل سیکرٹری اسٹبلشمنٹ ڈویژن افضل لطیف، چیئرمین ایچ ای سی ڈاکٹر مختار احمد ، جی ایم اسلام آباد کلب ، ممبر پلاننگ سی ڈی اے و دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی ۔

مزید : صفحہ آخر