کشمیر میں تیار ہونے والے سگریٹ ،ایف بی آر کے خلاف درخواست مسترد

کشمیر میں تیار ہونے والے سگریٹ ،ایف بی آر کے خلاف درخواست مسترد

لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائی کورٹ نے آزاد جموں وکشمیر میں تیار ہونے والے سگریٹ ایف بی آر کی طرف سے ضبط کرنے کے خلاف دائر درخواست مسترد کردی ۔فاضل عدالت نے قرار دیا کہ پاکستان کے ٹیکس حکام کو اپنی حدود میں سگریٹ کی کسی بھی قسم کی غیر قانونی نقل و حرکت روکنے اور کارروائی کرنے کا مکمل اختیار حاصل ہے ۔ایف بی آر کے ان لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک کی طرف سے آزاد جموں و کشمیر میں تیار کرکے پاکستان میں تقسیم ہونے والے سگریٹ ضبط کرلئے تھے جس کے خلاف والٹن ٹوبیکو ، نوبل ٹوبیکو اور وطن ٹوبیکو کے تقسیم کنندگان نے لاہور ہائی کورٹ سے رجوع کیا تھا اور موقف اختیار کیا تھا کہ آزاد جموں و کشمیر ایف بی آر کے دائرہ اختیار سے باہر ہے ،ایف بی آر کی طرف سے موقف اختیار کیا گیا کہ آزاد جموں وکشمیر میں کام کرنے والی سگریٹ فیکٹریاں غیر قانونی طور پر پاکستان میں سگریٹ فروخت کررہی ہیں جس کے باعث قومی خزانے کو نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے ۔ان لینڈ ریونیو انفورسمنٹ نیٹ ورک نے اپریل2017ء میں غیر قانونی سگریٹس کے خلاف کارروائی شروع کی تھی جس کے نتیجہ میں کئی ٹرک سگریٹس قبضہ میں لئے گئے تھے۔

مزید : صفحہ آخر