سانحہ ماڈل ٹاؤن، قاتل کوئی وزیر ہو یا وزیر اعلیٰ، جرم کی سزا ملنی چاہیے: سراج الحق

سانحہ ماڈل ٹاؤن، قاتل کوئی وزیر ہو یا وزیر اعلیٰ، جرم کی سزا ملنی چاہیے: سراج ...

لاہور(این این آئی)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ حکومت میں رہنے والی سیکولر اور لبرل پارٹیوں نے پاکستان کی نظریاتی شناخت کو نقصان پہنچایا ، آئندہ انتخابات میں ایم ایم اے دینی جماعتوں اور نظریہ پاکستان پر یقین رکھنے والے باکردار اور کرپشن سے پاک لوگوں کو ساتھ ملا کر الیکشن لڑے گی ، خیبر پختونخوا میں اتحادی حکومت کی کارکردگی کے بارے میں سوال کا جواب صوبہ کے عوام بہتر دے سکتے ہیں،ہم نے عوام کے اعتماد کو ٹھیس نہیں پہنچائی ، ماڈل ٹاؤن کے شہدا کے خاندانوں کو انصاف دلانے اور قاتلوں کو انصاف کے کٹہرے میں لانے کے لیے جماعت اسلامی نے سب سے پہلے آواز اٹھائی اور آئندہ بھی یہ مطالبہ کرتے رہیں گے، قاتل کوئی وزیر ہو یا وزیراعلیٰ، اسے جرم کی سزا ملنی چاہیے ۔ لندن ایئر پورٹ پر استقبال کرنے والے کارکنوں سے خطاب اور میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے سراج الحق نے کہاکہ سامراجی قوتوں کی غلام اور سٹیٹس کو کی حامی جماعتوں نے پاکستان کے نظر یہ کو پس پشت ڈال کر ملک کی بنیادوں کو کھوکھلا کیا اور قوم نے جس عظیم مقصد کے لیے لاکھوں جانوں کا نذرانہ پیش کر کے پاکستان حاصل کیاتھا ان قربانیوں کو ضائع کرنے کی کوشش کی ۔ آئین ملک میں قرآ ن و سنت کی بالادستی کا تقاضا کرتاہے مگر حکمرانوں نے ہمیشہ غیر آئینی ہتھکنڈوں سے جمہوریت کے نام پر شخصی آمریت مسلط رکھی ۔ 2018 ء کے انتخابات میں ایم ایم اے ملک کی دیگر دینی جماعتوں ، دیانتدار اور نظریہ پاکستان پر غیر متزلزل ایمان رکھنے والوں کو ساتھ ملا کر الیکشن لڑے گی ۔ ہم ملک سے کرپشن کے خاتمہ کی جدوجہد کر رہے ہیں ہماری کوشش ہے کہ پاکستان عالمی برادری میں اپنے کھوئے ہوئے وقار کو دوبارہ حاصل کرے اور آزاد و خود مختار ملک کی حیثیت سے عالمی برادری کے ساتھ اپنے معاملات کو آگے بڑھائے ۔

مزید : صفحہ آخر