انتخابی فہرستیں، مرنیوالے سوا 9لاکھ ووٹرز کا نام نکالنے، 73لاکھ نئی رجسٹریشن کا فیصلہ

انتخابی فہرستیں، مرنیوالے سوا 9لاکھ ووٹرز کا نام نکالنے، 73لاکھ نئی رجسٹریشن ...

اسلام آباد(آن لائن)الیکشن کمیشن آف پاکستان نے انتخابی فہرستوں کے پہلے مرحلے میں تصدیقی عمل کے بعد73لاکھ ساٹھ ہزار سے زائد نئے ووٹرز کے اندراج کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے جس کے بعد رائے دہندگان کی تعداد 10کروڑ40لاکھ سے تجاوز کرجائے گی۔جبکہ یونین کونسلوں اور نادرا میں فوت ہونے والے 9 لاکھ 23 ہزار سے زائد ووٹرز کو انتخابی فہرستوں سے ہذف بھی کیا جائے گا۔تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان نے انتخابی فہرستوں کی نظرثانی کا آغاز 15جنوری 2018ء سے کرنے کا فیصلہ کیا ہے،ان انتخابی فہرستوں کی نظرثانی کے پہلے مرحلے میں تصدیقی عمل کے بعد73لاکھ60ہزار 279 افراد کو بطور ووٹر درج کیا جائے گا اور9لاکھ 23ہزار947 ووٹرز کو انتخابی فہرستوں سے ہذف کیا جائے گا جنکی فوتگی یونین کونسلوں اور نادرا میں درج کرائی گئی ہے،اس کے علاوہ دوسرے مرحلے میں تمام انتخابی فہرستوں کو ہر ضلع کے مقرر کردہ ڈسپلے سنٹرز میں آویزاں کیا جائے گا تاکہ رائے دہندگان انتخابی فہرستوں کا جائزہ لے سکیں اور اندراج منتقلی اور درستگی کے لئے درخواستیں دے سکیں،الیکشن کمیشن کے مطابق نظرثانی کے بعد انتخابی فہرستوں میں درج رائے دہندگان کی تعداد10 کروڑ40لاکھ سے تجاوز کرجائے گی،اس کے علاوہ انتخابی فہرستوں کی نظرثانی کا کام شما ریاتی بلاکس کی رپورٹ آنے پر شروع ہوگا اور 15جنوری2018ء سے 8فروری تک گھر گھر تصدیق کا عمل مکمل ہوگا اور9تا 18فروری تک تصدیق شدہ ووٹرز کی ڈیٹاانٹری کا کام مکمل ہوگا اور19فروری سے5مارچ تک انتخابی فہرستوں کی چھپائی کا کام ہوگا اور انتخابی فہرستوں پر اعتراضات 14اپریل تک نمٹائے جائیں گے اور آخر میں30اپریل تک انتخابی فہرستوں پر نظرثانی کا کام مکمل ہوگا۔

مزید : صفحہ آخر