پیچھے رہ جانے کی بڑی وجہ سائنس و ٹیکنالوجی سے دوری ، ماضی میں تعلیم کی بجائے ہتھیاروں پر توجہ دی گئی : احسن اقبال

پیچھے رہ جانے کی بڑی وجہ سائنس و ٹیکنالوجی سے دوری ، ماضی میں تعلیم کی بجائے ...
 پیچھے رہ جانے کی بڑی وجہ سائنس و ٹیکنالوجی سے دوری ، ماضی میں تعلیم کی بجائے ہتھیاروں پر توجہ دی گئی : احسن اقبال

  


اسلام آباد (آئی این پی) وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ مستقبل کی ضروریات کے تحت اعلیٰ تعلیم کے فروغ پر توجہ دے رہے ہیں‘ اعلیٰ تعلیم کی کمی کی وجہ سے آج کوئی بو علی سینا یا ابن الہیشم پیدا نہیں ہورہے‘ مسلم دنیا کے پیچھے رہ جانے کی وجہ سائنس و ٹیکنالوجیس ے دوری ہے‘ نچلے طبقے کے طلباء کو تعلیم کی فراہمی ہماری اولین ترجیح ہے‘ ماضی میں تعلیم کی بجائے ہتھیاروں کے حصول پر توجہ دی جاتی رہی‘ سرکاری سکولوں کے بچوں کو میٹرک کے بعد تعلیم کے حصول کے لئے وظائف دیئے جارہے ہیں۔ بدھ کو احسن اقبال نے انڈومنٹ وظائف این ای ایس ٹی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہماری زیادہ تر بچیاں ضلع میں یونیورسٹیاں نہ ہونے کی وجہ سے اعلیٰ تعلیم حاصل کرنے سے محروم رہ جاتی ہیں۔ اب ہر ضلع میں یونیورسٹیز کیمپس قائم کئے جارہے ہیں یونیورسٹی کیمپس کے قیام سے بچیاں اب آسانی سے اعلیٰ تعلیم حاصل کرپارہی ہیں حکومت نے طلباء کی اعلیٰ تعلیم کیلئے متعدد منصوبے شروع کئے ماضی میں تعلیم کی بجائے ہتھیاروں کے حصول پر توجہ دی جاتی رہی۔ مستقبل کی ضروریات کے تحت اعلیٰ تعلیم کے فروغ پر توجہ دے رہے ہیں اس وقت دس ہزار سے زائد پی ایچ ڈی کے طالب علموں کو وظائف دیئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اعلیٰ تعلیم کی کمی کی وجہ سے آج کوئی بو علی سینا یا ابن الہیشم پیدا نہیں ہورہے اسلام نے بھی تعلیم کے حصول پر زور دیا ہے۔ مسلم دنیا کے پیچھے رہ جانے کی وجہ سائنس و ٹیکنالوجی سے دوری ہے سرکاری سکولوں کے بچوں کو میٹرک کے بعد تعلیم کے حصول کیلئے وظائف دیئے جارہے ہیں ہر سال تین سو سے زائد بچوں کو وظائف دے رہے ہیں۔ تعلیم کا شوق رکھنے والے میلوں کا سفر طے کرکے تعلیم حاصل کررہے ہیں۔ تعلیم یافتہ نوجوان ہی ہمارے مستقبل کا سرمایہ ہیں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے انڈومنٹ فنڈ شروع کیا۔ انہوں نے کہا کہ شہباز شریف کے وژن کو دیکھتے ہوئے این ای ایس ٹی وﷲائف شروع کئے انڈومنٹ فنڈ کے وظائف کو پچیس ارب روپے تک لے کر جائیں گے۔ تعلیم کے میدان میں کامیابی حاصل کرنے والی قومیں ہی تاریخ میں مقام بناتی ہیں۔ نچلے طبقے کے طلباء کو تعلیم کی فراہمی ہماری اولین ترجیح ہے۔ وژن 2025 میں تعلیم کے شعبے پر بھرپور توجہ دی گئی ایچ ای سی کا بجٹ 13 ارب سے بڑھا کر 35 ارب روپے کردیا گیاہے۔ 18 ویں ترمیم کے بعد اعلیٰ تعلیم پر توجہ دی فاٹا میں یونیورسٹی قائم کی۔ امریکہ کی طاقت اسلحہ نہیں بلکہ اس کی یونیورسٹیاں ہیں امریکہ دس سال میں پاکستان کو دس ہزار پی ایچ ڈی وظائف دے گا۔

احسن اقبال

ااسلام آباد (این این آئی) وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چودھری نے کہاہے کہ مسلم لیگ (ن) ملک میں آئین وقانون کی بالادستی پر یقین رکھتی ہے، تمام قومی اداروں کو اپنی آئینی حدود میں رہتے ہوئے کام کرنا چاہئے ،تحریک انصاف اقتدار میں آنے کیلئے امپائر کی انگلی کے انتظار کی بجائے عوامی خدمت پر توجہ مرکوز کرے،زیادہ ووٹ حاصل کرنیوالے ہی ملک پر حکمرانی کا حق رکھتے ہیں۔ طاہرالقادری کا نام ہی سازشوں کیلئے کافی ہے، تحریک انصاف اور عوامی تحریک کے سربراہان کی ملاقات حکومت کو نشانہ بنانے کیلئے تھی ۔بدھ کو نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر مملکت برائے داخلہ نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) ملک میں آئین و قانون کی بالادستی پر یقین رکھتی ہے۔ تمام قومی اداروں کو اپنی آئینی حدود میں رہتے ہوئے کام کرنا چاہئے یہ ملک میں نظام کی مضبوطی میں بھی مددگار ثابت ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف اقتدار میں آنے کیلئے امپائر کی انگلی کے انتظار کی بجائے عوامی خدمت پر توجہ مرکوز کرے۔ انہوں نے کہا کہ عام انتخابات میں سب سے زیادہ ووٹ حاصل کرنیوالی سیاسی جماعت کو ہی عوام پر حکمرانی کا حق حاصل ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ (ن) ملک میں ایسے نظام عدل کی بات کرتی ہے جو مساوی بنیادوں پر سب کیلئے ایک جیسا ہو کیونکہ کوئی بھی قانون سے بالاتر نہیں۔ انہوں نے کہا کہ محمد نواز شریف نے اداروں کے احترام ہی کیلئے خود کو احتساب کیلئے پیش کیا اور عدالتوں میں پیش بھی ہوئے۔ انہوں نے کہا کہ طاہرالقادری کا نام ہی سازشوں کیلئے کافی ہے۔انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف اور پاکستان عوامی تحریک کے سربراہان کی ملاقات لیگی حکومت کو نشانہ بنانے کیلئے تھی ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان نے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کی اس کے خاندان سے ملاقات کیلئے عالمی قوانین کی پیروی کی ہے کیونکہ پاکستان نے عالمی کنونشنز اور اقوام متحدہ میں دستخط کر رکھے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کلبھوشن یادیو پاکستان میں دہشت گردی کی سرگرمیوں کے فروغ میں ملوث رہا ہے اور اس کا اعتراف اس نے خود بھی کیا ہے۔

طلال چودھری

مزید : صفحہ اول