امریکہ کی بیشتر ریاستیں شدید سردی کی لپیٹ میں ، ہنگامی حالت نافذ

امریکہ کی بیشتر ریاستیں شدید سردی کی لپیٹ میں ، ہنگامی حالت نافذ

واشنگٹن(اظہر زمان، خصوصی رپورٹ) پورے ملک کی طرح واشنگٹن ڈی سی اس وقت شدید سردی کی لپیٹ میں ہے جہاں تعطیلات کے باعث ہر قسم کی سیاسی اور قانون سازی کی سرگرمیاں معطل ہو چکی ہیں۔ صدر ٹرمپ اپنی فیملی کے ہمراہ فلوریڈا میں اپنی نجی تفریحی رہائش گاہ میں کرسمس اور نئے سال کی چھٹیاں منا رہے ہیں دیگر اہم سیاسی اداکار اپنے اپنے آبائی شہروں کو جا چکے ہیں ۔ کیپٹل ہل میں سینیٹ اور ایوان نمائندگان کے دونوں ایوان اہم قانون سازی مکمل کر کے رخصت پر جا چکے ہیں۔ سینیٹ 3جنوری کو اور ایوان نمائندگان 8جنوری کو نئے سال کے سیشن کا آغاز کر رہے ہیں۔ اس وقت امریکہ کی شمال مشرقی اور وسط مغربی ریاستیں شدید سردی کی لپیٹ میں ہے اور سردی کی یہ لہر جنوری کے پہلے ہفتے تک جاری رہنے کا امکان ہے اور بعض مقامات پر برف باری بھی ہو رہی ہے اور خاص طور پر مشرقی ریاستوں میں بر باری زیادہ شدت سے ہوئی ہے۔ پنسلوینیا کی ریاست کے شہر ایری میں 53انچ تک برف پڑنے کے بعد ہنگامی حالت کا نفاذ کر دیا گیا ہے۔ ماہرین موسمیات کے مطابق شدید سردی کے باعث امریکہ کی بیشتر ریاستوں میں درجہ حرارت نقطہ انجماد سے کہیں نیچے آ گیا ہے اور خطرناک حد تک سرد ہوائیں چل رہی ہیں۔

شدید سردی

مزید : صفحہ اول