حکومت کیخلاف کوئی الائنس تشکیل نہیں دیا جا رہا‘ مولانا فضل الرحمن

حکومت کیخلاف کوئی الائنس تشکیل نہیں دیا جا رہا‘ مولانا فضل الرحمن

ملتان (سٹی رپورٹر)جمعیت علماء اسلام (ف) پاکستان کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن نے کہا ہے کہ حکومت اپنی مدت پوری کر چکی ہے، اب کوئی نیا اتحاد بنے گا تو وہ آئندہ الیکشن کے حوالے سے بنے گا۔ جو بھی طے کرنا ہے وہ فاٹا کے لوگوں کی مشاورت سے طے کیا جائے، جے یو آئی فاٹا کے مسئلے پر فریق نہیں۔ متحدہ مجلس عمل کو فعال کر رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملتان میں پیر آف تونسہ شریف خواجہ عطاء اللہ تونسوی کی رہائش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ دھرنا اسلام آباد میں ہو یا کہیں اور، ہمارا کوئی لینا دینا نہیں ہے۔ جو بھی بات کی ہے دھرنے سے بالا تر ہو کر بات کی ہے، حکومت کے خلاف کوئی الائنس تشکیل نہیں دیا جارہا ہے بلکہ عام انتخابات کے حوالے سے علماء،مشائخ سے ملاقاتیں کی جا رہی ہیں۔ حکومت کے خلاف اتحاد اگر کوئی بن بھی گیا تو فائدہ نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ فاٹا کے انضمام کے مسئلے میں ہماری جماعت فریق نہیں، یہ مسئلہ وہاں کی عوام کی رائے اور باہمی اتفاق سے طے کیا جائے۔ متنازعہ صورت میں خود فاٹا کے اندر بھی ایسے فیصلے جو اسلام آباد سے مسلط کئے جائینگے وہ زیادہ مقبول نہیں ثابت ہوسکیں گے۔ اگر فاٹا کے اندر قبائلی عوام آپس میں کوئی دو رائے رکھتے ہیں تو انکو بھی آپس میں بیٹھ کر مشاورت سے ایک موقف کی طرف جانا چاہیے اس موقع پر خواجہ عطاء اللہ تونسوی کے ساتھ پیر حمید الدین سیالوی کی 31دسمبر تک صوبائی وزیرقانون رانا ثناء اللہ کے استعفیٰ سمیت دیگر معاملات پر بھی گفتگو کی گئی۔

مولانا فضل الرحمن

مزید : کراچی صفحہ اول