موسمی بیماریوں میں اضافہ ،راولپنڈی کے ہسپتالوں میں اینٹی بائیوٹک ادویات ختم

موسمی بیماریوں میں اضافہ ،راولپنڈی کے ہسپتالوں میں اینٹی بائیوٹک ادویات ختم

راولپنڈی(سید گلزارساقی سے)موسمی بیماریوں کے مریضوں کی تعداد میں اضافہ کے ساتھ ہی راولپنڈی کے ہسپتالوں سے الرجی، دردکش ،نفسیاتی اور اینٹی بائیوٹک ادویات ختم،سینکڑوں مریضوں کاعلاج معالجہ خطرے میں پڑگیا،لواحقین اپنے پیاروں کی صحت یابی کیلئے بازارسے ادویات خریدنے پرمجبورہوگئے۔ذرائع سے معلوم ہواہے کہ موسمی بیماریوں کے علاوہ مختلف امراض میں مبتلا9ہزارسے زائد مریض روزانہ راولپنڈی الائیڈہاسپٹلز میں علاج معالجہ کیلئے آتے ہیں جن میں دو سو سے زائد مریض مختلف موسمی امراض اور الرجی میں مبتلاہوتے ہیں جن کو ہسپتال سے ادویات کی فراہمی کی بجائے بازاروسے ادویات خریدنے پر مجبورکردیاگیاہے، الائیڈہاسپٹلز کے مرکزی سٹوروں میں ایماکسل،ڈوکسی، سٹرازین، کلوروفنرامین ،ایول ،ڈکلوران ، ایپی وال، ٹیگرال ،ایلپ سمیت دیگر متعددادویات کا سٹاک ہی ختم ہوگیاہے جس سے جہاں ہسپتالوں میں داخل شعبہ سرجری، گائنی، میڈیسن، آرتھوپڈک سمیت دیگر شعبوں کے مریضوں کو ادویات کے حصول کیلئے سخت مشکلات کا سامناکرناپڑتاہے وہاں مفت علاج معالجہ کیلئے دوردرازسے آنے والے درجنوں مریض ہسپتالوں سے مایوس لوٹنے لگے ہیں جس پر انہوں نے سخت احتجاج کرتے ہوئے اعلی حکام سے فوری نوٹس لینے کی اپیل کی ہے، ادھر اس ضمن میں الائیڈہاسپٹلز کے کسی ذمہ دارسے رابطہ نہ ہوسکاجبکہ ڈیوٹی افسران کا کہناہے کہ ہسپتالوں کو ادویات کا سٹاک اکٹھابھجوایاجاتاہے جس میں کمی پیشی ہسپتالوں کی انتظامیہ کی مرضی سے کی جاتی ہے ، ادویات کی قلت کا مسلہ زیادہ سامنے نہیںآتا کبھی کبھارہی ایسی صورتحال کا سامنا کرناپڑتاہے ،جلدادویات منگوالی جائیں گی۔

مزید : کراچی صفحہ اول