کراچی کا مینڈیٹ چوری نہیں ہونے دیا جائیگا‘ رضا علی عابدی

کراچی کا مینڈیٹ چوری نہیں ہونے دیا جائیگا‘ رضا علی عابدی

  

خانیوال (بیورونیوز )متحدہ قومی موومنٹ کے ممبر قومی اسمبلی رضا علی عابدی نے کہا ہے کہ آرمی چیف کے سینٹ میں (بقیہ نمبر36صفحہ12پر )آنے اور بریفننگ کے بعد پختہ یقین ہے کہ عام انتخابات مقررہ وقت پر ہونگے اور سینٹ کے انتخابات میں بھی کوئی شک نہیں وہ گزشتہ روز سید اسد جعفری ایڈووکیٹ کی رہائش گاہ پر میڈیا سے گفتگو کررہے تھے انہوں نے مزیدکہاکہ مردم شماری میں کراچی کو نظر اندازکیا جارہا ہے اگر صحیح کی جائے تو ایم کیو ایم کی 30سیٹیں بنیں گی اور یہ ملک کی دوسری ،تیسری بڑی پارٹی بن جائے گی انہوں نے کہاکہ جب سیاستدان غلطیاں کرتے ہیں تو سیاسی میدان میں خلا آجاتا ہے جسے کوئی اور نادیدہ طاقتیں پُر کرنے لگتی ہیں انہوں نے ایم کیو ایم کا الطاف حسین سے نہ تو کئی رابطہ ہے اور سیاسی امور میں نہ ہی کسی مشاورت کی گنجائش ہے انہون نے کہاکہ جب بعض طاقتوں نے پی ایس پی کے ذریعے زبردستی پارٹیاں تبدیل کروانے کی کوشش کی تو انہوں نے استعفیٰ دے دیا انہوں نے کراچی کے منیڈیٹ کو چوری نہیں ہونے دیا جائے گا انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی ،تحریک انصاف اور کسی بھی دیگر جماعت کے پاس کراچی کا منیڈیٹ نہیں یہ صرف ایم کیو ایم کے پاس ہے انہوں نے کہاکہ فاروق ستار اور مصطفی کمال میں ایک مشترکہ انتخابی نشان پر الیکشن لڑنے پر اختلافات ہوئے انہوں نے کہاکہ جمہوریت کو مضبوط کرنے کیلئے ضروری ہے کہ لوکل باڈیز کومضبوط کریں کراچی میں کارپوریشن کو غیر موثر کیا ہوا ہے انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہاکہ بھارتی جاسوس کلبھوشن کی اس کی والدہ اور بیوی سے ملاقات پر پاکستانی قوم کے جذبات کو تو ٹھیس پہنچی مگر عالمی سطح پر اس کے مثبت اثرات مرتب ہوئے اور انسانی بنیادوں پر اچھا پیغام گیا انہو ں نے کہاکہ جنوبی پنجاب کو ایک الگ صوبے کی طورپر ضرور بنایا جانا چاہیے کیونکہ یہ یہاں کی ضرورت ہے انہوں نے جنوبی پنجاب میں مخدوم شاہ محمود قریشی کی سیاسی خدمات اور وژن کا اعتراف کیا اور خراج تحسین پیش کیا ایک سوال کے جواب میں کہاکہ ایم کیو ایم دراصل غریبوں کی پارٹی ہے یہ پورے ملک میں آنا چاہتی ہے مگر جیسے ہی سندھ کے علاقے خیر پور میرس آتی ہے اس کے بعد رحیم یار خان آنے کے لئے نادیدہ طاقتیں رکاوٹ پیدا کرتی ہیں انہوں نے کہاکہ پاکستان کی ترقی ووٹ اور منتخب اداروں کے تقدس سے وابستہ ہے اسے ہر حال میں برقرار رکھا جائے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -