اورنج ٹرین، عدلیہ کے احکامات پر عملدرآمدکے لئے اعلیٰ حکام کو خط ارسال

اورنج ٹرین، عدلیہ کے احکامات پر عملدرآمدکے لئے اعلیٰ حکام کو خط ارسال

لاہور(نامہ نگار خصوصی )اورنج لائن ٹرین منصوبے پر دوبارہ کام شروع کرنے سے متعلق سپریم کورٹ پاکستان کے احکامات پر عملدرآمد کی تفصیلات کے حصول کے لئے وزیراعلیٰ پنجاب سمیت دیگر اداروں کو خط لکھ دیاگیا ہے۔سول سوسائٹی نیٹ ورک نے اظہر صدیق ایڈووکیٹ کی وساطت سے وزیر اعلیٰ پنجاب، چیئرمین ماس ٹرانزٹ اتھارٹی ، ڈی جی ایل ڈی اے اور ایم ڈی نیسپاک کو بھجوائے گئے خط میں اورنج لائن ٹرین منصوبے پر کام شروع کرنے کے لئے سپریم کورٹ کے احکامات سے متعلق سوالات اٹھائے گئے ہیں اور کہا گیا ہے کہ سپریم کورٹ کے حکم پر حکم امتناعی والے 11ثقافتی مقامات کے تحفظ کے لئے کتنی رقم مختص کی گئی ہے اور اورنج لائن ٹرین منصوبے پر دوبارہ کام شروع کرنے کے لئے ماہرین پر مشتمل کمیٹی میں کن ماہرین کو شامل کیا گیاہے، وزیراعلیٰ کو لکھے گئے خط میں مزید کہا گیا ہے کہ اگر سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل کئے بغیر اورنج لائن ٹرین منصوبے کا کام شروع کیا گیا ہے تو ثقافتی ورثوں کے 200 میٹر تک کام روک دیا جائے کیونکہ یہ توہین عدالت ہے ، خط میں کہا گیا ہے کہ اگر سپریم کورٹ کے فیصلے پر عمل کر کیا گیا ہے تو ماہرین پر مشتمل کمیٹی اور مختص رقم کی تفصیلات فراہم کی جائیں ۔

خط ارسال

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر