کلبھوشن جادھو کی ملاقات کو مغرب میں تحسین کی نظر سے دیکھا جارہا ہے، پاکستان پر کوئی دباﺅ نہیں تھا: آصف غفور

کلبھوشن جادھو کی ملاقات کو مغرب میں تحسین کی نظر سے دیکھا جارہا ہے، پاکستان ...
کلبھوشن جادھو کی ملاقات کو مغرب میں تحسین کی نظر سے دیکھا جارہا ہے، پاکستان پر کوئی دباﺅ نہیں تھا: آصف غفور

  


راولپنڈی (ڈیلی پاکستان آن لائن) ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور نے کہا ہے کہ کلبھوشن جادھو کی اہل خانہ سے ملاقات کو مغرب میں تحسین کی نظر سے دیکھا جارہا ہے، اس سلسلے میں پاکستان پر کوئی دباﺅ نہیں تھا، یہ ملاقات انسانی بنیادوں پر کرائی گئی جس کا مقدمے پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔

پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ ہمارے بھارت کے ساتھ تعلقات اس نوعیت کے ہیں کہ اگر اچھا کام بھی کریں گے تو انڈین میڈیا اسے برا بنا کر پیش کرے گا۔ ہم نے حاضر سروس بھارتی فوجی افسر کو پکڑا ، اس کا مقدمہ ایک طرف لیکن اگر ہم نے انسانی ہمدردی کی بنیادوں پر کلبھوشن کی اہل خانہ سے ملاقات کرائی ہے تو اسے تحسین کی نظر سے دیکھا جانا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ کلبھوشن جادھو کی اہل خانہ سے ملاقات کو مغربی ممالک میں تحسین کی نظر سے دیکھا جا رہا ہے، اس کا مقدمے پر کوئی اثر نہیں پڑے گا۔کلبھوشن کے ساتھ ملاقات کے معاملے میں پاکستان پر کوئی دباﺅ نہیں تھا کیونکہ اگر دباﺅ ہوتا تو ہم اسے قونصلر رسائی دیتے ، یہ ملاقات صرف انسانی ہمدردی کی بنیادوں پر کرائی گئی۔

مزید : اہم خبریں /قومی /دفاع وطن