میری تقریر کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا، ڈی جی آئی ایس پی آر کے ردعمل پر دلی دکھ ہوا: خواجہ سعد رفیق

میری تقریر کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا، ڈی جی آئی ایس پی آر کے ردعمل پر ...
میری تقریر کو سیاق و سباق سے ہٹ کر پیش کیا گیا، ڈی جی آئی ایس پی آر کے ردعمل پر دلی دکھ ہوا: خواجہ سعد رفیق

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ والد محترم کی برسی پر میری ساری تقریر قومی اداروں کے مابین ہم آہنگی، مفاہمت اور متحدہو کرملک کےلئے کام کرنے کا بیانیہ ہے، میری تقریر کے بعد مخصوص چینلز نے میری گفتگو کو سیاق و سباق سے ہٹ کر توڑ مروڑ کر پیش کیا، ڈی جی آئی ایس پی آر ایک مثبت آدمی ہیں اور میری تقریر پر ان کی جانب سے ردعمل پر مجھے دلی افسوس ہوا ہے۔

خواجہ سعد رفیق کا بیان انتہائی غیر ذمہ دارانہ، پاک فوج منظم، آرمی چیف کے حکم پر چلتی ہے: ڈی جی آئی ایس پی آر

ڈی جی آئی ایس پی آر کی جانب سے وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کے بیان کو غیر ذمہ داراقرار دینے اور ایسے بیانات سے گریز کرنے کا مشورہ دینے پر اپنا ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ میں ایک ذمہ دار اور سنجیدہ شخص ہوں ، کبھی غیر ذمہ دارانہ یا غیر آئینی رویہ نہیں اپنایا۔ ماتحت نظام کو کبھی ٹارگٹ کیا نہ ہی اس کا تصور کر سکتا ہوں۔

میں نے اپنے والد محترم کی برسی پر تقریر کی اور اس تقریر کے ایک حصے کو میڈیا کے مخصوص چینلز نے حقائق سے ہٹ کر پیش کیا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر Positive آدمی ہیں اور ان کے ردِ عمل پر دلی دکھ ہوا ۔میری27 منٹ طویل تقریر بالائے طاق رکھ کر چند الفاظ پر رائے قائم کرنا مناسب نہیں، میڈیا چینلز تبصرہ ضرور کریں لیکن میری ساری تقریر بھی سنوائیں۔

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

سعد رفیق کا مزید کہنا تھا کہ ریاستی اداروں کے مابین فاصلے اور غلط فہمیاں پیدا کرنے والے ملک سے زیادتی کر رہے ہیں۔ ہمیں شکایات پیداہوتی ہیں تو جذب کرتے ہیں یا خاموشی سے متعلقہ اتھارٹی کو مطلع کرتے ہیں۔

یقین رکھتاہوں کہ ہم تدبر فراست اور باہمی اتحادہی سے آگے بڑھ سکتے ہیں۔جاننے والے جانتے ہیں کہ میں ریاستی اداروں کے مابین ہم آہنگی کے لئے خاموش کردار ادا کرتا رہتا ہوں۔ میں ایک ذمہ دار اور سنجیدہ شخص ہوں ، کبھی غیر ذمہ دارانہ یا غیر آئینی رویہ نہیں اپنایا- میں نے ماتحت نظام کو کبھی ٹارگٹ کیا نہ ہی اس کا تصور کر سکتا ہوں۔

مزید :

Breaking News -اہم خبریں -قومی -