بھارتی مظالم کو دنیا کے سامنے آشکار کریں!

بھارتی مظالم کو دنیا کے سامنے آشکار کریں!

  



وزیراعظم عمران خان نے جلال پور کینال کی تعمیر کا افتتاح کرتے ہوئے ایک مرتبہ پھر پوری دنیا کے ممالک کی توجہ بھارتی جارحیت اور ظلم کی طرف دلائی اور آگاہ کیا ہے کہ بھارتی وزیراعظم خود اپنے ملک کے اندر ہونے والے ہنگاموں سے گھبرا کر آزاد کشمیر کی طرف کوئی حرکت کر سکتا ہے۔ انہوں نے مقبوضہ کشمیر اور بھارت میں ہونے والے مظالم اور مسلم کش پالیسی کی طرف توجہ دلائی اور کہا ہے کہ اگر بھارت کی طرف سے جارحیت ہوئی تو منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔ وزیراعظم نے پھر بروقت انتباہ کیا کہ بھارتی فوج کنٹرول لائن کی مسلسل خلاف ورزیاں اور بھاری اسلحہ بھی استعمال کر رہی ہے۔ ابھی دو روز قبل ہی ہمارے دو جوان شہادت کا درجہ حاصل کر چکے ہیں۔ آئی ایس پی آر کے مطابق جوابی کارروائی میں بھارت کا زیادہ نقصان ہوا ہے۔ وزیراعظم اور ہمارے وزیرخارجہ کی طرف سے حالات کے مطابق دنیا کو آگاہ کرنے کے لئے بار بار بتانا اور یاد دہانی اچھی بات ہے۔ تاہم یہ کافی نہیں۔ ان دنوں بھارتی حکومت خود اپنے جال میں پھنسی ہوئی اور بھارت میں شہریت بل پر جو احتجاج کی لہر اٹھی ہے اس نے دنیا کی توجہ مبذول کرا لی ہے۔ یہ اچھا موقع ہے کہ بہتر سفارت کاری سے مقبوضہ کشمیر کا مقدمہ بھی پیش کیا جا سکے۔ حکومت پاکستان جو آواز بلند کر رہی ہے اس سے اتفاق ہے لیکن اس سے کہیں زیادہ کچھ کرنے کی ضرورت ہے اگر سابقہ خارجہ سیکرٹریوں سے مشاورت کی جا سکتی ہے تو اچھے تعلقات والے ڈپلومیٹک مشن بھی بیرونی دنیا میں بھجوائے جا سکتے ہیں۔

مزید : رائے /اداریہ