پولیو کے مزید 4 کیسز سامنے آگئے،تعداد 100 ہوگئی

پولیو کے مزید 4 کیسز سامنے آگئے،تعداد 100 ہوگئی

  



ٹنڈوالہ یار، لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک، آن لائن) سندھ میں رواں برس پولیو وائرس سے متاثرہ بچوں کی تعداد 19 اور خیبر پختونخوا میں پولیو کیسز کی تعداد 81 ہوگئی ہے تفصیلات کے مطابق ٹنڈوالہ یار میں پولیو نے اپنے پنجے گاڑنے شروع کردیئے ٹنڈوالہ یار کے گاؤں مولوی عمر داؤدانی میں رہائش پذیر ہدایت اللہ برفت کا 22ماہ کا بیٹا دلاور برفت جو پولیو کا شکار ہوکر حیدرآباد کے ہسپتال میں زیر علاج تھا جو زندگی کی بازی ہار گیا۔ جبکہ ہدایت اللہ کا دوسرا بیٹا 48ماہ کا عبدالسلام عرف آصف بھی پولیو وائرس کا شکار ہوگیا عبدالسلام عرف آصف کی پازیٹو رپورٹ آنے کے بعد محکمہ صحت ٹنڈوالہ یار میں کھلبلی مچ گئی محکمہ صحت کی ٹیمیں پولیو کا شکار ہونے والے بچے کے گھر پہنچ گئے۔ایمرجنسی آپریشن سینٹر خیبر پختونخوا کے مطابق صوبے میں پولیو کے دو نئے کیسز ضلع ٹانک اور بنوں سے رپورٹ ہوئے ہیں۔ضلع ٹانک میں 15 ماہ کے بچے اور بنوں میں 17 ماہ کی بچی پولیو سے متاثر ہوئی ہے۔متاثرہ بچوں کے فضلوں کے نمونوں سے لیبارٹری ٹیسٹ میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔رواں سال کے دوران خیبر پختونخوا میں پولیو کیسز کی تعداد 81 ہوگئی ہے۔کوآرڈینیٹر آف ایمرجنسی آپریشن سینٹر عبدالباسط کے مطابق پولیو ویکسین ہر لحاظ سے محفوظ ہے حکومت پولیو کے خاتمے میں پر عزم ہے تاہم والدین اور معاشرے کے تمام طبقات کو حکومت کے ساتھ تعاون کرنا ہوگا۔سندھ سے بھی پولیو کے دو نئے کیسز سامنے آئے ہیں۔ ترجمان ایمرجنسی آپریشن سیل کے مطابق ٹنڈوالہ یار کے 22 ماہ کے بچے اور سکھر کی 7 سالہ بچی میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔ترجمان ایمرجنسی آپریشن سیل کے مطابق سندھ میں رواں برس پولیو وائرس سے متاثرہ بچوں کی تعداد 19 ہوگئی۔وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے سندھ میں پولیو کے مزید دو کیسز ظاہر ہونے پر گہرے دکھ کا اظہار کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ ہم نے پولیو کے خاتمے کیلئے بھرپور اقدامات کئے لیکن نتائج ٹھیک نہیں ملے۔

چل بسا

مزید : صفحہ آخر