امریکہ، رواں سال 14970افرا د قتل، 32ہزار سے زائد نے خود کشی کی 

  امریکہ، رواں سال 14970افرا د قتل، 32ہزار سے زائد نے خود کشی کی 

  



واشنگٹن(اظہر زمان،بیوروچیف) موجودہ سال کے دوران امریکہ میں آتشیں اسلحے سے 38 ہزار سے زائد افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ بندوق کے تشدد کا جائزہ لینے والی امریکہ کی معروف این جی او جی وی اے نے یہ اعداد و شمار جاری کئے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق 38 ہزار سات سو تیس اموات میں سے 14 ہزار نو سو ستر افراد قتل یا حادثاتی فائرنگ کا نشانہ بنے تھے جو گزشتہ برس ایسے سانحوں کی تعداد کے تقریباً برابر ہے۔ 2019ء میں ہونیوالی اموات میں سے 23 ہزار سے زائد افراد خودکشیوں کی وجہ سے ہوئیں۔ آتشیں اسلحے سے 2019ء میں ہونیوالی ہلاکتوں میں گیارہ سال سے کم عمر کے بچوں کی تعداد 207 تھی جبکہ اس عمر کے زخمی ہونیوالے بچوں کی تعداد 473 تھی۔ ہلاک ہونیوالے بارہ سے سترہ سال کی عمر کے بچوں کی تعداد 762 جبکہ 2253 زخمی ہوئے۔ جی وی اے کی رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے 2019ء میں وسیع پیمانے پر شوٹنگ کے 409 اور وسیع پیمانے پر قتل کے 30 واقعات پیش آئے جن میں کم از کم چار افراد ہلاک یا زخمی ہوئے۔ رپورٹ کے مطابق اس برس جن ریاستوں میں آتشیں اسلحے سے فائرنگ کے زیادہ واقعات پیش آئے ان میں لوزیانا، میسی سیپی، فلوریڈا، البامہ، جا ر جیا اور ساؤتھ کیرولینا شامل ہیں۔ اس کے بعد جن دوسری ریاستوں میں ایسے واقعات پیش آئے ان میں نارتھ کیرولینا، ورجینیا، ویسٹ ورجینیا، میری لینڈ، پنسلوینیا، ڈیلاور، واشنگٹن ڈی سی اور نیویارک شامل ہیں۔ 

امریکہ 

مزید : صفحہ اول


loading...