قبائلی علاقوں میں جرگہ سسٹم تنازعات ختم کرنے کا بہترین حل، صلاح الدین

قبائلی علاقوں میں جرگہ سسٹم تنازعات ختم کرنے کا بہترین حل، صلاح الدین

  



ضلع خیبر (بیورورپورٹ) قبائلی علاقوں میں جرگہ سسٹم تنازعات اور دشمنی کو ختم کرنے کا بہترین حل ہے حکومت خاطر پسیدخیل کے لواحقین کو انصاف فراہم کریں اور انکے بچوں کو مالی پیکج دی جائے ان خیالات کا اظہار فاٹا گرینڈ الائنس اور قومی مشران کا لنڈی کوتل پریس کلب میں اظہار خیال اس موقع پر قومی مشران ملک صلاح الدین کوکی خیل ملک محمد حسن آفریدی ملک بسم اللہ آفریدی ملک طاماش شلمانی و دیگر مشران نے کہا کہ سیکورٹی فورسز حکام قومی مشران کے اعتماد کے بغیر سرچ آپریشن اور چھاپوں کی مزمت کرتے ہیں مشران نے کہا کہ سیکورٹی فورسز علاقے میں سرچ آپریشن اور چھاپے کے دوران قومی مشران کو اعتماد میں لے مشران نے کہا کہ لنڈی کوتل ایف سی حراست میں مبینہ طور پر جاں بحق نوجوان خاطر خان پسیدخیل کے واقعہ کے حوالے سے کمانڈنٹ خیبر رائفلز کرنل بلال کے ساتھ ملاقات ہوئی اور اس واقے پر تفصیلی بات چیت ہوئی جبکہ طورخم بارڈر اور چیک پوسٹوں پر عوام کو بے جا تنگ کرنے حوالے سے بھی ان کو آگاہ کر دیا جس پر کمانڈنٹ خیبر رائفلز کرنل بلال تمام مسائل کو خوش اسلوبی سے حل کرنے کا وعدہ کیا اس موقع پر مشران نے کہا کہ قبائلی مشران اور عوام محب وطن ہیں اور ہمیشہ ملک اور علاقے امن کے قیام میں ہر ممکن تعاون کیا ہے اس لیے حکومت طورخم بارڈر پر عوام کو روزگار کے مواقع فراہم کی جائے تاکہ ان کی مشکلات میں کمی آجائے مشران نے کہا کہ سیکورٹی فورسز کے اعلیٰ حکام سے اپیل کرتے ہیں کہ لنڈی کوتل ایف سی حراست میں جاں بحق نوجوان خاطر خان پسیدخیل کے لواحقین کو انصاف فراہم کریں اور ان کو شہید پیکج دیاجائے اور ان کے بچوں کو ماہانہ وظیفہ مقرر کیا جائے اور آئندہ ایسے واقعات کے ر وک تھام کے لئے عملی اقدامات کریں تاکہ آئندہ ایسا واقعہ رونما نہ ہوسکے

مزید : پشاورصفحہ آخر