پلاؤ فروش اور ٹریفک پولیس میں جھگڑا، دھکم پیل،پولیس پر تشدد کا الزام

 پلاؤ فروش اور ٹریفک پولیس میں جھگڑا، دھکم پیل،پولیس پر تشدد کا الزام

  



ڈیرہ اسماعیل خان(بیورو رپورٹ) شوبرا چوک کے سامنے موسمیات روڈ پر پلاؤ فروش کو روڈ سے ہٹانے کے تنازعہ کے دوران پلاؤ فروش اور ٹریفک پولیس انچارج میں جھگڑا، دھکم پیل میں پلاؤ فروش کا دیگچہ الٹ گیا، پلاؤ فروش کا ٹریفک پولیس پر تشدد کا الزام، ٹریفک اہلکاروں کی تشدد کی تردید۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ کینٹ کی حدود شوبرا چوک کے سامنے موسمیات روڈ پر پلاؤ فروشوں کے سٹال کی وجہ سے ٹریفک کے مسائل پر ٹریفک پولیس نے پلاؤ فروش ہو سڑک کنارے سے سٹال ہٹانے کیلئے کہا اس دوران ٹریفک انچارج اور فضل الرحمن نامی پلاؤ فروش کے مابین تکرار اور دھکم پیل کے دوران پلاؤ کا دیگچہ سڑک پر الٹ گیا۔ پلاؤ فروش فضل الرحمن کا کہنا تھا کہ اس نے پولیس حکام سے سٹال کی اجازت لی ہے اور اس جگہ کا کنٹونمٹ حکام کو باقاعدہ ٹیکس ادا کرتے ہیں، فضل الرحمن نے الزام عائد کیا کہ ٹریفک انچارج نے زیادتی کرتے ہوئے میرا پلاؤ کا دیگچہ گرا کر میرے بچوں کو رزق چھینا اور مجھ پر تشدد کیا ہے، میری بیوی کینسر کی مریضہ ہے، غریب آدمی ہوں سڑک کنارے پلاؤ بیچ کر بچوں کو پیٹ پالتا اور بیوی کا علاج کراتا ہوں۔ دوسری جانب انچارج ٹریفک نے تشدد کی تردید کرتے ہوئے کہا کہ پلاؤ فروش نے خود دیگچہ گرایا ہے۔ واضح رہے کہ اس دوران مشتعل افراد نے کچھ دیر کیلئے احتجاجاً روڈ بھی بلاک کیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...