JF-17 تھنڈر، پاکستان نے ایک اور اہم سنگ میل عبور کرلیا

JF-17 تھنڈر، پاکستان نے ایک اور اہم سنگ میل عبور کرلیا
 JF-17 تھنڈر، پاکستان نے ایک اور اہم سنگ میل عبور کرلیا

  



کراچی(ویب ڈیسک) پاکستان ایروناٹیکل کمپلیکس کامرہ نے ( دو سیٹوں ) والے JF-17 تھنڈرطیارے تیار کرنے کا ایک اور اہم سنگ میل عبور کرلیا۔ائیر کرافٹ مینوفیکچرنگ فیکٹری کامرہ میں 8 (dual seat) والے JF-17 تھنڈر طیاروں کی

پروقار تقریب رونمائی کا انعقاد ہوا جس کے پاک فضائیہ کے سربراہ ایئر چیف مارشل مجاہد انور خان مہمان خصوصی تھے۔عوامی جمہوریہ چین کے سفیر جناب یاؤژنگ اور ایوی ایشن انڈسٹریز آف چائنہ (AVIC) کے نائب صدر مسٹر یاؤ زاؤپنگ نے اس تقریب میں خصوصی شرکت کی۔چیئرمین پاکستان ائیرو ناٹیکل کمپلیکس کامرہ کے ائیر مارشل احمر شہزاد نے اپنے خطاب میں اس پراجیکٹ کی چیدہ چیدہ خصوصیات پرروشنی ڈالتے ہوئے بتایا کہ پاکستان ایروناٹیکل کمپلیکس کامرہ اور چائنہ نیشنل ایرو ٹیکنالوجی امپورٹ اینڈ ایکسپورٹ کارپوریشن (CATIC) نے چائینیز کمرشل طیاروں کے لئے پرزہ جات کی تیاری کے معاہدے پر دستخط کئے۔ پاک چین برادرانہ تعلقات پر روشنی ڈالتے ہوئے چینی سفیر نے کہا کہ JF-17 تھنڈر پاک چین دوستی اور باہمی تعاون کی ایک لا زوال مثال ہے۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پاک فضائیہ کے سربراہ نے پی اے سی کامرہ اور CATIC کو 2019 کے پیداواری اہداف کو حاصل کرنے اور پہلے 8 ڈوئل سیٹ JF-17تھنڈر طیاروں کی 5 ماہ کی ریکارڈ مدت میں تکمیل پر خراجِ تحسین پیش کیا۔انہوں نے مزید کہا کہ یہ اہم سنگِ میل JF-17 پروگرام میں خصوصی اہمیت کا حامل ہے اور دونوں ممالک کے درمیان موجود پائیدار دوستانہ تعلقات کا مظہر ہے۔ائیر چیف نے کہا کہ JF-17 تھنڈر طیارہ پاک فضائیہ میں کلیدی کردار کا حامل ہے اور آپریشن سوئفٹ ریٹورٹ میں اسکی جنگی صلاحیت اسکی افادیت کا منہ بولتا ثبوت ہے۔

بعد ازاں پاک فضائیہ کے سربراہ نے ایویانکس پروڈکشن فیکٹری کامرہ میں ڈوئل سیٹ JF-17 تھنڈر طیاروں کی انٹیگریشن فیسلٹی کا اافتتاح کیا، یہ سہولت پاک فضائیہ میں شامل JF-17 تھنڈر کو اپنی مرضی کے ایویانکس اور ہتھیاروں سے لیس کرنے کے ساتھ ساتھ خود انحصاری اور آپریشنل تیاریوں میں معاون ثابت ہوگی۔

مزید : قومی /بزنس