پاکستان علماء کونسل نے چینی حکومت اور اویغور مسلمانوں کے درمیان مفاہمت کی اپیل کر دی

پاکستان علماء کونسل نے چینی حکومت اور اویغور مسلمانوں کے درمیان مفاہمت کی ...
پاکستان علماء کونسل نے چینی حکومت اور اویغور مسلمانوں کے درمیان مفاہمت کی اپیل کر دی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)چین کے مسلماںوں کے حق میں پاکستان سے بڑی آواز بلند ہو گئی ،علامہ طاہر اشرفی نے چین کی حکومت سے  ایسی اپیل کر دی ہے کہ ہر پاکستانی اس کی حمایت کرے گا ۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان علماء کونسل کے چیئرمین علامہ حافظ طاہر محمود اشرفی نے کہا ہے کہ چین کے اویغور مسلمانوں کے حوالے سے جو تشویش ناک خبریں آ رہی ہیں اس پر ہماری چینی حکومت سے گذارش ہے کہ اسلامی تعاون تنظیم ،رابطہ عالم اسلامی اور پاکستان کے علماء و مشائخ کے وفد کو اویغور مسلمانوں تک رسائی دی جائے تاکہ جو غلط فہمیاں یا مسائل چین کی حکومت اور مسلمانوں کے درمیان ہیں اِن کو ختم کیا جا سکے ۔اُنہوں نے کہا کہ پاکستان کے علماء و مشائخ اور پاکستانی عوام چین کے عظیم ترین دوست ہیں اور پاکستان  چین کو مستحکم دیکھنا چاہتا ہے جبکہ ہم بھی کسی صورت بھی چین کو غیر مستحکم نہیں دیکھنا چاہتے ،اِس لئے ضرورت اِس بات کی ہے کہ چین کے اویغور مسلمانوں اور حکومت کے درمیان مفاہمانہ کردار ادا کیا جائے ۔علامہ حافظ طاہر اشرفی کا کہنا تھا کہ ہم امید کرتے ہیں کہ اس معاملہ میں چین کی حکومت فوری اقدامات اٹھائے   گی۔

واضح رہے کہ چند روز قبل پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور آل راؤنڈر شاہد آفریدی نے بھی مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر وزیر اعظم عمران خان کی توجہ اویغور مسلمانوں کی جانب مبذول کرواتے ہوئے کہا تھا کہ چین میں اویغور مسلمانوں کی حالت زار کے بارے جان کر رہا نہیں جا رہا، وزیرِ اعظم عمران خان سے التجا ہے کہ آپ اُمہ کو متحد کرنے کی بات کرتے ہیں تو اس بارے میں بھی تھوڑا سوچیں اور چینی حکومت سے التجا ہے کہ خدارا اپنے ملک میں مسلمانوں کے ساتھ امتیازی سلوک روکیں۔شاہد آفریدی نے کچھ ہی دیر میں یہ ٹویٹ اپنے اکاؤنٹ سے  ڈیلیٹ کردیاتھا تاہم اُس وقت تک قوی ہیرو کا یہ ٹویٹ سوشل میڈیا پر وائرل ہو چکاتھا۔واضح رہے کہ سوشل میڈیا پرایغورمسلمانوں کے حوالے سے کئی تصویریں اور پوسٹیں بڑی تیزی کے ساتھ شیئر ہو رہی ہیں تاہم ان کی صداقت کے حوالے سے کچھ بھی واضح نہیں ہے۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد