ملتان،لیڈی ہیلتھ ورکرز کا مطالبات منظوری کیلئے دھرنا

ملتان،لیڈی ہیلتھ ورکرز کا مطالبات منظوری کیلئے دھرنا

  

 ملتان (  وقائع نگار)ملتان کی لیڈی ہیلتھ ورکرز مطالبات کی منظوری کے لئے سڑکوں پر نکل آئیں، مذاکرات ناکام ہونے پر شدید سردی میں گھنٹوں تک دھرنا دیئے رکھا مذاکرات کا دوسرا دور کامیاب ہونے پر دھرنا ختم کر دیا تفصیل کے مطابق نینشل پروگرام کے تمام ملازمین  بشمول لیڈی ہیلتھ ورکرز نے گزشتہ روز صدر رخسانہ انور کی قیادت میں ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی دفتر (بقیہ نمبر46صفحہ6پر)

سے کچہری چوک تک احتجاجی  ریلی نکالی اس دوران لیڈی ہیلتھ ورکرز نے کورونا ویکسین ریڈ کمپین کی ادائیگیاں نہ ہونے، پی او ایل کی عدم ادائیگی، بنیادی تنخواہ بطور بونس کی عدم ادائیگی، کورونا ریڈ کمپین فیز 2 کی ادائیگی ڈی ایم کارڈ کے ذریعے ادائیگی سمیت دیگر مطالبات کی منظوری کے لئے بھرپور نعرے بازی کی اس دوران سی او ہیلتھ ڈاکٹر شعیب الرحمان گورمانی سے لیڈی ہیلتھ ورکرز کے مذاکرات کا پہلا دور ناکام ہونے پر لیڈی ہیلتھ ورکرز نے کچہری چوک پر دھرنا دے دیا جس کے باعث گھنٹوں چوک چاروں جانب سے بلاک رہا اس موقع پر صدر نیشنل ایمپلائز ہیلتھ یونین کی صدر رخسانہ انور کا کہنا تھا کہ سرکاری اور اتوار کے روز تک کی  چھٹیاں بند کر دی گئی ہیں  لیڈی ہیلتھ وزیٹرز اور ورکرز فرنٹ لائن پر کام کرتے ہیں لیکن ان سے کیئے گئے وعدوں کو پورا نہیں کیا جا رہا ہے، جس پر وہ سراپا احتجاج ہیں ادھر سی ای او ہیلتھ ملتان ڈاکٹر شعیب الرحمان گورمانی سے مذاکرات کا دوسرا دور کامیاب ہونے پر لیڈی ہیلتھ ورکرز کے مطالبات پر کمیٹی قائم کر دی گئی ہے جہاں انکے جائز مطالبات کے فوری حل کو یقینی بنانے کے احکامات جاری کئے گئے ہیں جبکہ متعلقہ ہیلتھ آفیسران کو ذمہ داریاں بھی تفویض کر دی گئی ہیں 

ریلی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -