ترقی یافتہ ممالک میں کم شرح سود عالمی اقتصادی نظام کیلئے خطرہ بن گئی، پاکستان اکانومی واچ 

  ترقی یافتہ ممالک میں کم شرح سود عالمی اقتصادی نظام کیلئے خطرہ بن گئی، ...

  

اسلام آباد (آئی این پی)  پاکستان اکانومی واچ کے صدر ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے کہا ہے کہ عالمی اقتصادی نظام تیزی سے تباہی کی طرف جا رہا ہے۔اس نظام کی ناکامی کی صورت میں عوام پر مصائب کے پہاڑ ٹوٹ پڑیں گے اس لئے ترقی یافتہ ممالک اسے بچانے کے لئے متحد ہو کر اقدامات کریں۔عالمی اقتصادی نظام بیمار ہو چکا ہے اور اس کو فوری سرجری کی ضرورت ہے جسے ٹالنا خودکشی ہو گی۔ ڈاکٹر مرتضیٰ مغل نے  ایک بیان میں کہا کہ ترقی یافتہ ممالک میں ناقابل یقین حد تک کم شرح سود عالمی اقتصادی نظام کے لئے بڑا خطرہ بن گئی ہے۔کم شرح سود سے قرضوں کے حجم میں زبردست اضافہ ہو رہا ہے جس کا نتیجہ عالمی بحران کی صورت میں نکل سکتا ہے۔انھوں نے کہا کہ دنیا کی تاریخ میں کبھی بھی مارکیٹ میں اتنا سرمایہ زیر گردش نہیں رہا ہے جتنا کہ اب ہے۔شرح سود میں زبردست کمی کی وجہ سے سرمائے کا حصول آسان ہو گیا ہے جس سے سرمایہ کاروں کو فائدہ اور عوام کو نقصان ہو رہا ہے۔ مرکزی بینکوں کی پالیسیوں سے مہنگائی بڑھ رہی ہے اور عوام کا پیسہ تیزی سے سرمایہ داروں کی تجوریوں میں منتقل ہورہا ہے۔غریبوں کو لوٹ کر امیروں کو نوازا جا رہا ہے۔امیر مزید امیر ہو رہے ہیں جبکہ عوام کو انکی بچت پر کچھ نہیں مل رہا ہے۔کئی ممالک میں ایک سو ڈالر پر سال میں ایک سینٹ کا منافع دیا جا رہا ہے جو مذاق ہے۔اس صورتحال کو چلنے دیا گیا تو لوگ 2007-08 کے عالمی اقتصادی بحران کی تباہ کاریوں کو بھول جائیں گے۔

مزید :

صفحہ آخر -