پنجاب اسمبلی، خواتین کا تحفظ،پنا ہگاہ اتھارٹی بلز منظور، 4آرڈ یننس میں توسیع 

پنجاب اسمبلی، خواتین کا تحفظ،پنا ہگاہ اتھارٹی بلز منظور، 4آرڈ یننس میں ...

  

لاہور(نیوزایجنسیاں)حکومت اور اپوزیشن لوکل گورنمنٹ آرڈیننس پر متفقہ قانون سازی پر مل بیٹھنے کیلئے تیار ہے،سپیکرپرویز الٰہی نے قائمہ کمیٹی برائے بلدیات میں توسیع کی منظور ی دیتے ہوئے نام مانگ لئے،پنجاب اسمبلی نے خواتین کے تحفظ کا ترمیمی بل اور پنجاب پناہ گاہ اتھارٹی بل کثرت رائے سے منظور کر لیے،اجلاس میں چارآرڈیننسز میں 90دن کی توسیع بھی دیدی گئی۔پنجاب اسمبلی کا اجلاس گزشتہ روز بھی مقررہ وقت کی بجائے دو گھنٹے 36منٹ کی تاخیر سے سپیکر پرویز الٰہی کی زیر صدارت ہوا۔اجلاس میں سردار حسنین بہادر نے محکمہ لائیو سٹاک اینڈ ڈیری ڈویلپمنٹ سے متعلق سوالات کے جوابات دئیے۔پرویز الٰہی نے کہا کہ ہم نے پہلے بھی اپوزیشن کے ساتھ مل کر قانون سازی کی ہے،لوکل گورنمنٹ قانون کے حوالے سے قائد حزب اختلاف کی مثبت تجویز کا خیر مقدم کرتے ہیں۔ سپیکر پرویز الٰہی نے قائمہ کمیٹی برائے بلدیات میں توسیع کرتے ہوئے اپوزیشن سے نام مانگتے ہوئے کہا کہ  اس میں اس لیے توسیع دی جارہی ہے کہ تمام پارٹیوں سے مشاورت کے بعد ہاؤس میں لایا جائے تاکہ پاس ہونے کے بعد دوسرے صوبوں کی طرح اختلافات پیدا نہ ہوں۔پنجاب اسمبلی نے مسودہ قانون (ترمیم)کام کی جگہ پر خواتین کو ہراساں کرنے سے تحفظ2020اورمسودہ قانون پنجاب پناہ گاہ اتھارٹی پیش کیے گئے جو کہ کثرت رائے سے منظور کر لیے گئے۔ صوبائی وزیر قانون محمد بشارت راجہ نے ایوان میں تحریک پیش کی کہ آئین کے آرٹیکل کے تحت آرڈیننس(ترمیم)پنجاب میڈیکل اینڈ ہیلتھ انسٹیٹیوشنز،آرڈیننس(ترمیم) راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی 2021، آرڈیننس(دوسری ترمیم)کمیشن برائے بے ضابطہ ہاؤسنگ سکیمیں پنجاب 2021، آرڈیننس مقامی حکومت پنجاب2021میں توسیع کیلئے قرار داد پیش کی جو کہ کثرت رائے سے منظور کر لی گئی اور ایوان نے مذکورہ چاروں آرڈیننسز میں 90دن کی توسیع کر دی۔اجلاس میں پی پی 206خانیوال سے نو منتخب رانا سلیم نے بطور رکن پنجاب اسمبلی حلف اٹھا یا، ڈپٹی سپیکر دوست محمد مزاری نے حلف لیا۔علاوہ ازیں صوبائی وزیر زراعت حسین گردیزی نے زراعت پر بحث سمیٹتے ہوئے بتایا ایوان کو بتایا پنجاب کویوریا کھاد کا کوٹہ مکمل نہیں مل رہا،70فیصد کوٹہ بنتا ہے جو کہ نہیں مل رہا،اس حوالے سے وفاقی حکومت کو آگاہ کر دیا ہے،ایوان سے استدعا ہے کہ وہ یوریا کھاد کے کوٹے کے حوالے سے قرار داد پنجاب اسمبلی میں لائی جائے۔ایجنڈا مکمل ہونے پر اجلاس منگل کی دوپہر ایک بجے تک ملتوی کر دیا۔

پنجاب اسمبلی

مزید :

صفحہ آخر -