کورونا،2اموات،لاہور میں اومیکرون کے 12مریضوں کی تصدیق

  کورونا،2اموات،لاہور میں اومیکرون کے 12مریضوں کی تصدیق

  

     لاہور،اسلام آباد،سیالکوٹ (جنرل رپورٹر،مانیٹرنگ ڈیسک،نیوزایجنسیاں) صوبائی دارالحکومت میں کورونا وائرس کے نئے ویرینٹ اومی کرون کے 12مریضوں کی تصدیق ہو گئی،7مریضوں کا تعلق جوہر ٹاؤن اور 5کا تعلق ڈیفنس سے ہے،23دسمبر کو مریضوں کے نمونے لئے گئے تھے۔دوسری جانب کورونا وائرس سے مزید2افراد جاں بحق ہو گئے جبکہ مجموعی اموات کی تعداد 28 ہزار 909ہو گئی ہے۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر (این سی او سی) کی جانب سے جاری تازہ اعدادو شمار کے مطابق گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں مزید 301 کورونا کیسز رپورٹ ہوئے۔ ادھرجنوبی افریقہ سے آنے والے 15 مسافر سیالکوٹ ائیر پورٹ کے قرنطینہ سینٹر سے فرار ہوگئے۔جبکہ قرنطینہ سے فرار ہونے والا اومی کرون سے متاثرہ شخص پکڑا گیا  جسے ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ پولیس ترجمان کے مطابق آج صبح بین الاقوامی پرواز کے ذریعے جنوبی افریقا سے 15 مسافر سیالکوٹ پہنچنے جنہیں فوری قرنطینہ سینٹر منتقل کیا گیا۔ جہاں سے وہ کسی طرح فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے۔ پولیس ترجمان کے مطابق فرار ہونے والے مسافروں کا ریکارڈ حاصل کرکے انہیں جلد تلاش کرلیا جائے گا۔این سی او سی کے سربراہ اسد عمر نے کہا ہے کہ اب تک ویکسین لگوانے والے افراد کی تعداد 15 کروڑ سے تجاوز کرگئی۔  ایشیائی ترقیاتی بینک کی جانب سے کرونا وائرس ویکسین کی مزید 15 ملین خوراکیں پاکستان پہنچ گئیں، اے ڈی بی کی جانب سے 500 ملین ڈالر کی امداد دی گئی ہے۔ 

کورونا،اومیکرون

نئی دہلی (آئی این پی)نئی دہلی میں اومیکرون کے کیسز میں اضافے کے بعد رات 11 سے صبح 5 تک کرفیو نافذ کردیا گیا ہے۔شہری حکومت نے کورونا کیسز میں اچانک 16 فیصد اضافے کے بعد کرفیو لگانے کا فیصلہ کیا ہے‘کیسز میں اضافہ ہوتا رہا تو ”یلو الرٹ“ نافذ کردیا جائیگا۔ بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق ریاست مہاراشٹرا اور نئی دلی میں کورونا وائرس کے نئے ویرینٹ اومیکرون میں ریکارڈ اضافے کی وجہ سے شہری حکومت نے کل سے کرفیو نافذ کرنے کا فیصلہ کیا ہے جو رات 11 بجے سے صبح 5 تک ہوگا۔رپورٹ کے مطابق شہری حکومت نے کورونا کیسز میں اچانک 16 فیصد اضافے کے بعد کرفیو لگانے کا فیصلہ کیا۔ 

دہلی میں کرفیو

مزید :

صفحہ اول -