بیٹی کے کورونا کا شکار ہونے کے بعد اسرائیلی وزیراعظم قرنطینہ چلے گئے

 بیٹی کے کورونا کا شکار ہونے کے بعد اسرائیلی وزیراعظم قرنطینہ چلے گئے

  

 تل ابیب (آئی این پی)بیٹی کے کرونا کا شکار ہونے کے بعد اسرائیلی وزیراعظم نے خود کو قرنطینہ کر لیا۔ یروشلم پوسٹ اخبار کی رپورٹ کے مطابق اسرائیلی وزیر اعظم نفتالی بینیٹ اپنی بیٹی کے کرونا وائرس سے متاثر ہونے کے بعد قرنطینہ میں داخل ہو گئے ہیں۔اخبار کا کہنا تھا کہ بینیٹ نے گولان کی پہاڑیوں میں کابینہ کے اجلاس سے قبل کرونا ٹیسٹ کرایا اور ٹیسٹ کے نتائج منفی آئے تاہم وہ اس کے باوجود اپنی بیٹی کے متاثر ہونے کی خبر کے بعد قرنطینہ میں چلے گئے ہیں۔اربوں لوگوں نے ہفتے کو کرونا کے سائے میں کرسمس منایا۔ کرونا کی وجہ سے کرسمس کی تقریبات دوسرے سال بھی متاثر ہوئی ہیں۔ حال ہی میں کرونا کی ایک نئی شکل ’اومی کرون‘ کے سامنے آنے کے بعد دنیا بھر میں کرسمس کی تقریبات میں خلل پڑا ہے۔ کرسمس کی تعطیلات کے اختتام ہفتہ کے دوران دنیا بھر میں 7000 سے زائد پروازیں منسوخ کر دی گئیں اور ہزاروں دیگر کو ملتوی کر دیا گیا۔ ویب سائٹ "FlightAware" کے مطابق اومی کرون کے مزید پھیلنے کے خطرے کے پیش مزید پروازیں منسوخ کی جاسکتی ہیں۔ یہ پروازیں ایک ایسے وقت میں منسوخ کی گئی ہیں جب دنیا کرونا کی نئی تبدیل شدہ شکل اومی کرون سے لڑ رہی ہے۔تہواروں کے موسم اور دنیا کے تمام حصوں میں کرونا وائرس کے تبدیل شدہ Omicron کے پھیلاؤ کے ساتھ عالمی ادارہ صحت نے اس بات کا اعادہ کیا ہے کہ کرونا اور اس کی مختلف اقسام کی روک تھام کے لیے ایک انتہائی اہم عنصر پر یعنی صفائی اور وینٹی لیشن پر عمل کیا جائے۔

اسرائیلی وزیراعظم

مزید :

صفحہ اول -