کینال کالونی مسائل کا گڑھ مکانوں کی چھتیں گرنے کاخدشہ

کینال کالونی مسائل کا گڑھ مکانوں کی چھتیں گرنے کاخدشہ

لاہور (اپنے نمائندے سے) پنجاب حکومت کے اعلیٰ افسران کی عدم توجہ اور محکمہ آبپاشی کے اعلیٰ افسران کی مجرمانہ خاموشی کے باعث محکمہ آبپاشی کے ملازمین کی رہائشی کینال کالونی مسائل کا گڑھ بن گئی 7 سال قبل تعمیر کئے جانے والے گھر ناقص میٹریل کے استعمال کے باعث ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو گئے جبکہ درجنوں مکانات کی چھتوں میں بھی دراڑیں پڑ چکی ہیں جو کسی بھی وقت گر کر بڑے حادثے کا سبب بن سکتی ہیں محکمہ آبپاشی کے سینکڑوں ملازمین حکومت کی عدم توجہ کے باعث سراپا احتجاج بن گئے وزیر اعلیٰ پنجاب سے نوٹس لینے کی اپیل کی ہے مزید معلوم ہوا ہے کہ 7 سال قبل 2005ءسابقہ پنجاب حکومت کے اعلیٰ افسران نے مغلپورہ میں موجود محکمہ آبپاشی کے سینکڑوں ملازمین کے کوارٹر خالی کرواتے ہوئے مسمار کر دئیے تھے اور اس کے متبادل ملتان روڈ ٹھوکر چوک پر کینال کالونی کے نام پر محکمہ آبپاشی کے گریڈ 1 سے لے کر گریڈ 7 تک کے 200 سے زائد ملازمین کے لئے گھر تعمیر کرنے کا سلسلہ شروع ہوا اور تقریباً 175 سے زائد گھر تعمیر کئے گئے تاہم ان گھروں کو تعمیر کرنے کا ٹھیکہ لینے والے ٹھیکیداروںنے بدنیتی سے دوران تعمیر استعمال ہونے والا میٹریل انتہائی ناقص استعمال کیا جس کے باعث چند سالوں بعد ہی تعمیر شدہ مکانات کھنڈرات میں تبدیل ہونے لگے اس وقت بھی 2 ہزار سے زائدخاندان ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہونے والے گھروں میں مقیم ہو کر موت کے سائے تلے زندگی گزارنے پرمجبور ہو چکے ہیں کینال کالونی کے رہائشی محمد عبداللہ نے روزنامہ ”پاکستان“ سے گفتگو کرتے ہوئے آگاہی دی کہ یہاں پر زیادہ تر تعمیر شدہ گھر جنہیں ہم کوارٹر کہتے ہیں کی چھتیں دراڑوں سے بھری پڑی ہیں جو کسی بھی وقت گر سکتی ہیں اور جس کے نتیجے میں جانی نقصان کا بھی ہر وقت خدشہ رہتا ہے بارش کی صورت میں تمام گھروں کی چھتوں سے پانی ٹپکتا رہتا ہے اور رات بھر کوئی بھی سو نہیں سکتا ہے ہم نے متعدد مرتبہ اپنے اعلیٰ افسران کو بھی ان خستہ حال گھروں کے حوالے سے آگاہی دی ہے مگر کوئی شنوائی نہیں ہو رہی ہے ہماری وزیر اعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف سے پرزور اپیل ہے کہ وہ ہمارے کوارٹروں کی حالت زار بہتر بنانے کےلئے مناسب اقدامات کریں اور ہمارے ٹوٹے پھوٹے گھروں کو دوبارہ ان کی اصلی حالت میں لا دیں تا کہ ہمارے آشیانے بھی خوبصورت نظر آئیں اور ہمارے بچوں اور فیملی کی جانیں بھی محفوظ ہو جائیں انہوں نے ڈائریکٹر انٹی کرپشن سے ناقص میٹریل استعمال کرنے والے ٹھیکیداروںکے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1