تیس مار خان سن لیں ،لاہور تحریک انصاف کا قلعہ ہوگا سب کو ساتھ لیکر چلیں گے

تیس مار خان سن لیں ،لاہور تحریک انصاف کا قلعہ ہوگا سب کو ساتھ لیکر چلیں گے

لاہور(جنرل رپورٹر، سٹاف رپورٹر) پاکستان تحریک انصاف لاہور کے نو منتخب صدر عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ خود کو لاہور کے ” تیس مار خان“ سمجھنے والے سن لیں لاہور اب کسی اور کا نہیں تحریک انصاف کا قلعہ ثابت ہوگا۔ یونٹی گروپ کی کامیابی میری نہیں عمران خان کی کامیابی اور پوری تحریک انصاف کی کامیابی ہے سب کو ساتھ لے کر چلیں گے میاں محمود الرشید اور فاروق امجد میر ہمارے ساتھ ہیں۔ ان کے گھر جاکر انہیں باہر لاﺅں گا اور آج کے بعد ہم ایک ہو جائیں گے 23 مارچ کو مینار پاکستان میں 80 ہزار نو منتخب عہدیدار حلف اٹھاکر سونامی کے سفر پر عملی طور پر گامزن ہوجائیں گے، مجھے کامیاب کرانے والوں کا مشکور ہوں۔تحریک انصاف نے تنظیم سازی کی فری اینڈ فیئر انتخابات کراکر ملک کے اندر حقیقی جمہوریت کی بحالی اور اسے پروان چڑھانے کا وعدہ پورہ کردیا وہ گزشتہ روز پارٹی آفس مال روڈ پر کامیابی کا شکریہ ادا کرنے کے لئے منعقدہ استقبالیہ سے خطاب کررہے تھے، جس میں نو منتخب سیکرٹری جنرل عبدالرشید بھٹی، عمر سرفراز چیمہ، جمشید اقبال چیمہ، میاں جاوید علی، شعیب صدیقی میاں افتخار سمیت سینکڑوں عہدیداروں اور کارکنوں نے شرکت کی۔ پاکستان تحریک انصاف لاہور کے نو منتخب صدر عبدالعلیم خان نے کہا ہے کہ ہماری نہیں عمران خان کی جیت ہوئی ہے۔ عمران خان نے قوم کے ساتھ جو وعدہ کیا تھا اسے پورا کردیا ہے اور ثابت کردیا ہے اگر کسی سیاسی جماعت میں پارٹی الیکشن کروانے کا حوصلہ ہے تو وہ صرف تحریک انصاف۔دوسری سیاسی جماعتوں کے الیکشن ہوتے ہیں تو بلا مقابلہ منتخب ہوجاتے ہیں اور ایک دو گھنٹے میں پارٹی الیکشن کا عمل بھی مکمل ہوجاتا ہے۔ ملک میں 218 سیاسی جماعتیں ہیں اگر کسی جماعت نے پارٹی الیکشن کروائے ہیں تووہ تحریک انصاف ہے جس کے اندر جو جمہوریت ہے وہ کسی اور جماعت کے اندر نہیں۔ پارٹی الیکشن کے دوران بھرپور مہم چلائی گئی نہ صرف پاکستان بلکہ برصغیر میں ایسے پارٹی الیکشن نہیں ہوئے ہیں۔ پارٹی الیکشن میں امیدواروں کی جیت عمران خان کی جیت ہے۔ ہم محمودالرشید کے گھر جائیں گے اور فاروق امجد میر کے گھر بھی۔ پارٹی الیکشن کے بعد ہم اکٹھے ہو گئے ہیں۔تحریک انصاف متحد ہے کوئی نہ سمجھے کہ پارٹی میں دھڑا بندی ہے جب بھی عمران خان کا نام آئے گا ہم سب اکٹھے ہوجائیں گے۔ تحریک انصاف یہ ثابت کرئے گی کہ لاہور کسی اور کا نہیں تحریک انصاف کا قلعہ ہے۔ 23 مارچ کو مینار پاکستان میں عظیم الشان جلسہ ہوگا۔ کسی جماعت میں حوصلہ نہیں کہ وہ پارٹی میں صاف ستھرے الیکشن کروائے۔ ہم دکھانا چاہتے ہیں کہ موروثی سیاست سے نکلو عمران خان کا کوئی بھائی پارٹی میں نہیں یہ کارکنوں کی پارٹی ہے دوسری جماعتوں کے کارکن اپنے لیڈروں کے سامنے اٹھ کھڑے ہوں اور اعلان کردیں کہ اب ملک میں موروثی نہیں چلے گی۔ اگر عمران خان پارٹی الیکشن کروا سکتے ہیں تو تم کیوں نہیں۔ عبدالعلیم خان نے مزید کہا کہ دوسری سیاسی جماعتیں پارٹی الیکشن نہیں کروائیں گی کیونکہ انہیں معلوم ہے کہ ان کے بیٹے اور بیٹیاں ہار جائیں گی۔ یہ ہے جمہوریت جس کا پرچم عمران خان نے تھاما ہے۔ ہم غلامی سے نجات دلائیں گے ہم آئندہ الیکشن میں متحد ہوکر تاریخی فتح حاصل کریں گے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1