سیکرٹ فنڈ کیس ، سپریم کورٹ نے ڈی جی آئی بی کا جواب مسترد کردیا

سیکرٹ فنڈ کیس ، سپریم کورٹ نے ڈی جی آئی بی کا جواب مسترد کردیا

اسلام آباد(آن لائن)سپریم کورٹ نے آئی بی سیکرٹ فنڈ کیس کی سماعت کے دوران ڈی جی آئی بی کا جواب مسترد کرتے ہوئے چوبیس گھنٹے میں نیا جواب داخل کرنے کی ہدایت‘ جواب میں توہین آمیز الفاظ استعمال کرنے پر چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے اظہار برہمی کرتے اٹارنی جنرل سے کہا کہ جواب پر آپ کے دستخط ہیں‘ ڈی جی کے دستخطوں سے جواب داخل کریں پھر ہم ان سے خود نمٹ لیں گے۔ بدھ کے روز چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری کی سربراہی میں تین رکن بنچ نے کیس کی سماعت کی تو اس دوران بتایا گیا کہ ڈی جی آئی بی کی جانب سے آئی بی سیکرٹ فنڈ کے استعمال بارے جواب داخل کردیا گیا ہے۔ تفصیلات سے آگاہ کرتے ہوئے اٹارنی جنرل عرفان قادر نے عدالت کو بتایا کہ آپ کے حکم پر جواب داخل کرادیا گیا ہے اس پر چیف جسٹس نے کہا کہ جواب میں توہین آمیز زبان استعمال کی گئی ہے اور اس جواب میں ڈی جی آئی بی نے اپنے دستخط نہیں کئے ہیں۔ انہوں نے وزارت قانون سے رائے بھی نہیں لی اور وزارت قانون کا حوالہ بھی نہیں دیا اس پر اٹارنی جنرل نے کہا کہ آپ کہتے ہیں تو جواب واپس لے کر نیا جواب داخل کردیں گے ویسے یہ جواب وزارت قانون کے مشو رے سے جمع کرایا گیا ہے جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ جواب پر ڈی جی کے نہیں آپ کے دستخط ہیں۔ ڈی جی کے دستخطوں سے جواب داخل کریں پھر ان سے ہم خود نمٹ لیں گے۔ خود ذمہ داری لیں یا ذمہ دار کے دستخط کرائیں۔ اس پر اٹارنی جنرل نے عدالت سے استدعاءکی کہ انہیں کچھ مہلت دی جائے کہ وہ نئی ہدایات لے کر جواب داخل کرادیں گے جس پر عدالت نے انہیں چوبیس گھنٹے کی مہلت دیتے ہوئے آج جمعرات تک کیلئے سماعت ملتوی کردی اور اٹارنی جنرل نے ڈی جی آئی بی کا جمع کرایا گیا جواب بھی واپس لے لیا۔

اظہار برہمی

مزید : صفحہ اول