سرگودھا یونیورسٹی کے طلبا کے داخلہ کی منسوخی کے احکامات کالعدم قرار

سرگودھا یونیورسٹی کے طلبا کے داخلہ کی منسوخی کے احکامات کالعدم قرار

لاہور (نامہ نگارخصوصی)لاہورہائیکورٹ کی مس جسٹس عائشہ اے ملک نے سرگودھا یونیورسٹی کے ایم اے انگلش کے طلبہ وطالبات کے داخلہ کی منسوخی کے احکامات کو کالعدم قرار دے دیا۔ سرگودھا یونیورسٹی کے طلبہ و طالبات کی جانب سے دائر درخواست میں یونیورسٹی کی جانب سے مذکورہ طلبہ کے داخلہ کی منسوخی کے قانونی جوازکو چیلنج کیاگیاتھا۔درخواست میں کہا گیا کہ یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے کسی نوٹس کے بغیر 60 طلبہ و طالبات کومیرٹ پالیسی کے خلاف داخلہ حاصل کرنے کی بنیاد پر ان کے داخلہ بی ایس انگلش ، اور ایم اے انگلش کے طلبہ کے داخلہ کو منسوخ کرنے کا حکم دیا جو غیر قانونی ہے لہذا عدالت اس امر کا نوٹس لے ۔ فاضل عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد یونیورسٹی کی جانب سے حکم کو کالعدم قرار دے دیاہے۔

کالعدم قرار

مزید : صفحہ آخر