بلوچستان حکومت اور دہشت گردی، زرداری ’براستہ‘ ایران کوئٹہ پہنچ گئے

بلوچستان حکومت اور دہشت گردی، زرداری ’براستہ‘ ایران کوئٹہ پہنچ گئے
 بلوچستان حکومت اور دہشت گردی، زرداری ’براستہ‘ ایران کوئٹہ پہنچ گئے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

 کوئٹہ ( مانیٹرنگ ڈیسک) صدر مملکت آصف علی زرداری ایران کے دورے کے بعد کوئٹہ پہنچ گئے ۔ دہشت گردہی میں وسیع پیمانے پر ہلاکتوں کے وقت مظاہرین نے صدر سے کوئٹہ کا دورہ کرنے کا مطالبہ کیا تھا اور ان کی یقین دہانی پر ہی تدفین عمل میں آئی تھی ۔ آج صدر مملکت پاکستان آصف علی زرداری ایران سے بذریعہ طیارہ کوئٹہ پہنچ گئے ۔ ائیر پورٹ پر گورنر بلوچستان نواب ذوالفقارعلی مگسی، پیپلز پارٹی کے صوبائی صدر میر صادق عمرانی، ارکان صوبائی اسمبلی محترمہ غزالہ گولہ، بابو امین عمرانی، جعفر جارج، اسفند یار کاکڑ، سینیٹر روزی خان کاکڑ، میر باز کھیتران، انسپکٹر جنرل پولیس بلوچستان مشتاق احمد سکھیرا اور دیگراعلیٰ سول حکام نے ان کا استقبال کیا۔ صدر مملکت کوئٹہ میں قیام کے دوران امن و امان اور ترقیاتی کاموں سے متعلق اجلاس کی صدارت اور سیاسی و مذہبی جماعتوں کے رہنماﺅں سے ملاقات سے ملاقاتیں کریں گے۔ صدر مملکت سے بلوچستان کے ارکان اسمبلی اور علماءکے وفد نے بھی ملاقات کی جس میں اہم امور پر گفتگو کے ساتھ ساتھ صوبے میں جاری ترقیاتی کاموں کے حوالے سے بات چیت کی گئی۔ ذرائع کے مطابق صدر کی آمد سے بلوچستان میں رائج گورنر راج کا خاتمہ متوقع ہے۔ صدر آصف علی زرداری نے نولانگ ڈیم کا سنگ بنیاد بھی رکھا۔ ڈیم پر 18 ارب کی لاگت سے دریائے مولا پر تعمیر کیا جائے گا اور اس سے لاکھوں ایکڑ اراضی کے لئے آبپاشی کی سہولت میسر آئے گی۔

مزید : قومی