سنی مجلس عمل کی اپیل پر ملک بھر میں یوم تحفظ ناموس رسالت منایا گیا

سنی مجلس عمل کی اپیل پر ملک بھر میں یوم تحفظ ناموس رسالت منایا گیا

لاہور (نمائندہ خصوصی ) سنی مجلس عمل کی اپیل پر ملک بھر میں یوم تحفظ ناموسِ رسالت منایا گیا۔ جمعہ کے اجتماعات میں علماء نے تحفظ ناموس رسالت کے موضوع پر خطابات کیے۔ سنی مجلس عمل کے چیئر مین پیر محمد افضل قادری، پیر سید مظہر سعید کاظمی، ڈاکٹر محمد آصف اشرف جلالی، قاری محمد زوار بہادر، علامہ حافظ خادم حسین رضوی، ثروت اعجاز قادری، پیر سید محفوظ مشہدی، علامہ احمد علی قصوری اور دیگر نے مختلف مقامات پر جمعہ کے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گستاخانِ رسول کو تحفظ فراہم کرنے والی اسلام دشمن قوتیں پاکستان میں قانون ناموسِ رسالت 295-C کو غیر مؤثر کروا کر توہین رسالت کرنے والوں کو کھلی چھٹی دینا چاہتی ہے لیکن یہ خواب ان کا کبھی پورا نہیں ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ ملک اسلام کے نام پرحاصل کیا گیا تھا توہین انبیاء، توہین اہل بیت اور توہین صحابہ کرنے والوں کیلئے اس ملک میں کوئی جگہ نہیں ہر صورت ان کا محاسبہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ محبت رسول ہمارے ایمان کا حصہ ہے ہم اپنی جانوں کے نذرانے پیش کر کے ناموس رسالت کا تحفظ کریں گے ۔علماء نے کہا کہ اس وقت دنیا بھر کے کفار امام النبیاء کی توہین کر رہے ہیں عالم اسلام کے حکمران غیرت ایمانی کا مظاہرہ کرتے ہوئے عالمی سطح پر توہین انبیاء پر قانون سازی کروائیں۔

ضرور پڑھیں: سوچ کے رنگ

اس موقع پر حکمرانوں نے مطالبہ کیا گیا کہ لاؤڈ سپیکر ایکٹ کی آڑ میں مساجد کمیٹیوں کو حراساں کرنے کا سلسلہ بند کیا جائے ، گرفتار علماء کو فوراً رہا کیا جائے ، علماء پر بنائے گئے جھوٹے مقدمات فوراً ختم کیے جائیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 1