پاکستان کو پولیو فری ملک بنایا جائے گا ، سائرہ افضل تارڑ

پاکستان کو پولیو فری ملک بنایا جائے گا ، سائرہ افضل تارڑ

 اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وزیر مملکت برائے نیشنل ہیلتھ سروسز، ریگولیشنز اینڈ کوآرڈینیشن سائرہ افضل تارڑ نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت پورے ملک سے پولیو کا خاتمہ کرے گی اس ضمن میں سندھ حکومت کی کارکردگی بہتر ہوئی ہے۔ اکتوبر 2014 ء کے بعد سے کراچی میں پولیو کا کوئی کیس رونما نہیں ہوا۔ وہ سندھ میں پولیو کی صورتحال بارے صورتحال کا جائزہ لینے کے لیے منعقدہ اجلاس کی صدارت کر رہی تھیں اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سائرہ افضل تارڑ نے کہا کہ سندھ میں پولیو کی ٹیموں کو مزید سیکورٹی فراہم کی گئی ہے اور اب یہاں پر امن و امان اور انسانی وسائل کا کوئی مسئلہ درپیش نہیں ہے حکومت صوبوں کے تعاون سے ملک کو پولیو فری بنائے گی۔اجلاس کے بعد سائرہ افضل تارڑ نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ وفاقی حکومت اور صوبائی حکومتوں کے مابین رابطہ کاری میں کوئی کمی نہیں ہے اور ٹیم ورک کے مثبت نتائج برآمد ہوئے ہیں ۔ ہم نے صوبوں کو بہتر اور تیز تر نتائج کے حصول کے لیے اپنا اپنا میکنیزم خود بنانے کی ہدایت کی تھی۔ وفاقی حکومت صوبوں کے ساتھ بھر پور تعاون کر رہی ہے ۔ اس طرح ہم اپنی آنے والی نسلوں کو اس قسم کی بیماریوں سے محفوظ بنائیں گے۔وزیر مملکت سائرہ افضل تارڑ نے مزید کہا کہ کراچی میں پولیو ٹیموں کے ہمراہ رینجرز اہلکار تعینات کئے گئے ہیں جبکہ قبائلی علاقہ جات میں فو ج کے تعاون سے پولیو کی مہم کامیابی سے جاری ہے ۔سندھ کے وزیر صحت جام مہتاب خان ڈاہر اور سیکرٹری ہیلتھ نے بریف کرتے ہوئے بتایا کہ سندھ حکومت کے تمام حکام بڑے عزم اور خلوص نیت سے کام کررہے ہیں اور صوبہ سے پولیو کا خاتمہ ان کیلئے ترجیحی چیلنج ہے ۔ سندھ کے نگران پولیو صوبائی سیل کی چیئرپرسن مسز شہناز وزیر علی نے کہاکہ سندھ حکومت ویکسینٹرز کو تمام سہولیات فراہم کررہی ہے اور انہیں تمام فنڈز مہیا کردیئے گئے ہیں ۔ اجلاس میں وفاقی سیکرٹری نیشنل سروسز ریگو لیشنز اینڈ کوآرڈیینشن کمشنر کراچی اور محکمہ صحت سندھ کے اعلیٰ حکام نے شرکت کی ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...