شہبازشریف کاپرجوش انداز میں ایک گھنٹے تک فی البدیہہ خطاب،دل کھول کر دھرنوں کا پس منظر اورپیش منظر بیان کیا

شہبازشریف کاپرجوش انداز میں ایک گھنٹے تک فی البدیہہ خطاب،دل کھول کر دھرنوں ...

لاہور(خصو صی رپورٹ)وزیر اعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف نے مسلم لیگ (ن) کی صوبائی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس سے پرجوش اور فکرانگیزانداز میں تقریباً ایک گھنٹے تک فی البدیہہ خطاب کیا۔وزیراعلیٰ نے اپنی تقریر میں دھرنوں کو ملک کی تاریخ کی سب سے بڑی اوربدترین سازش قرار دیتے ہوئے اس کے پس منظر اورپیش منظر پر تفصیل سے روشنی ڈالی اورصوبائی پارلیمانی پارٹی کے سامنے دل کھول کردھرنوں کے دوران پیش آنے والے واقعات اورنقصانات کوبیان کیا۔ وزیراعلیٰ جب صوبائی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس میں شرکت کیلئے ہال میں آئے تو انہوں نے فرداًفرداً ہر رکن اسمبلی کی نشست پر جا کران سے مصافحہ کیا۔ایک خاتون رکن اسمبلی نے وزیراعلیٰ کو کتاب پیش کی ۔وزیراعلیٰ کے پرجوش خطاب کے دوران اراکین اسمبلی بھر پور انداز میں تالیاں بجا کر انہیں داددیتے رہے۔ جب اپنا قافلہ عزم و یقین سے نکلے گا۔۔۔جہاں سے چاہیں گے رستہ وہیں سے نکلے گا وطن کی مٹی مجھے ایڑیاں رگڑنے دے۔۔۔مجھے یقین ہے چشمہ یہیں سے نکلے گا وزیراعلیٰ نے وقت کی اہمیت کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ قوم کا ایک ایک لمحہ قیمتی اورانمول ہے اور ہم سب سے محنت،دیانت اورامانت کاتقاضا کررہا ہے ،لہٰذاہم سب کو ایک ٹیم ورک کے طورپرآگے بڑھ کرعوام کے مسائل حل کرنا ہیں۔وزیراعلیٰ نے اپنی تقریر کا اختتام اس شعر پر کیا ۔ ان اندھیروں میں بھی منزل تک پہنچ سکتے ہیں ہم جگنوؤں کو راستہ تو یاد ہونا چاہیے فی البدیہہ خطاب ف

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...