این اے 122،نادراسے انگوٹھوں کی تصدیق کیلئے دلائل مکمل ،فیصلہ محفوظ

این اے 122،نادراسے انگوٹھوں کی تصدیق کیلئے دلائل مکمل ،فیصلہ محفوظ

 لاہور(نامہ نگار)الیکشن ٹربیونل نے چیئرمین تحریک انصاف عمران خان کی جانب سے حلقہ این اے 122کے ووٹرزکے انگوٹھوں کے نشانات کی نادراسے تصدیق کے لئے دائر درخواست پر وکلاء کے دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ 4مارچ تک محفوظ کرلیا ۔چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے اپنے وکیل انیس علی ہاشمی کے ذریعے الیکشن ٹربیونل کاظم علی ملک کے روبرو بیلٹ پیپرز پر ووٹرز کے انگوٹھوں کے نشانات کی نادراسے تصدیق کے لئے درخواست دائرکی تھی جس پر سپیکر قومی اسمبلی سردار ایاز صادق نے اپنے وکیل بیرسٹر اسجد سعید کے ذریعے جواب جمع کرایا۔ گزشتہ روز فریقین نے نادرا سے ووٹوں کی تصدیق کے حق میں اور اس کے خلاف اپنے اپنے دلائل دیئے ٹربیونل نے دونوں وکلاء کے دلائل مکمل ہونے پر درخواست پر فیصلہ 4 مارچ تک محفوظ کر لیاہے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان کے وکیل انیس علی ہاشمی کا کہنا تھا 15ہزار ووٹوں کا کوئی ریکارڈ نہیں ،فارم 14اور15پر نامعلوم ہاتھوں کے دستخط ہیں، ان کا کہنا تھا کہ نادرا کے پاس تمام ووٹرز کے انگوٹھوں کا ریکارڈ موجود ہے ،انگوٹھوں کی تصدیق سے حلقے کے سب اصل اور جعلی ووٹ قوم کے سامنے آ جائیں گے جبکہ سردار ایاز صادق کے وکیل بیرسٹر اسجد سعید کا کہنا تھا کہ نادرا ریکارڈ میں سال 2005سے قبل بننے والے شناختی کارڈز کے انگوٹھوں کے نشانات ناقابل شناخت ہیں اس لئے نادرا تمام ووٹرز کے انگوٹھوں کا موازنہ نہیں کر سکتاہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4


loading...