13ایڈیشنل ججوں میں 4مستقل6کو ایک سال توسیع دینے کی سفارش

13ایڈیشنل ججوں میں 4مستقل6کو ایک سال توسیع دینے کی سفارش

 لاہور(نامہ نگار خصوصی )جوڈیشل کمیشن پاکستان نے لاہور ہائی کورٹ کے 4ایڈیشنل ججوں کو مدت ملازمت میں توسیع دینے یامستقل کرنے کے لئے نظر انداز کردیا ہے جس کے نتیجہ میں یہ جج صاحبان اپنے عہدوں کا موجودہ دورانیہ پورا کرکے سبکدوش ہو جائیں گے ،جوڈیشل کمیشن نے لاہور ہائی کورٹ کے 4ایڈیشنل ججوں کو مستقل کرنے جبکہ 6ایڈیشنل ججوں کی مدت ملازمت میں ایک سال کی توسیع کی سفارش کی ہے ۔چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس ناصر الملک کی سربراہی میں ہونے والے جوڈیشل کمیشن کے اجلاس میں لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس عاطرمحمود، جسٹس شاہد بلال حسن، جسٹس مس عالیہ نیلم اور جسٹس عابدعزیز شیخ کو مستقل کرنے کی سفارش کی گئی ہے جبکہ جسٹس شہزادہ مظہر، جسٹس شاہ خاور ، جسٹس سکندر ذوالقرنین اورجسٹس شعیب سعید کومستقل کرنے یا پھر ان کے عہدے کی معیاد میں توسیع کے لئے نظر انداز کردیا گیا ہے ۔جوڈیشل کمیشن نے جسٹس جیمز جوزف، جسٹس ظفر اللہ خاکوانی، جسٹس شمس محمود مرزا، جسٹس شہباز علی رضوی، جسٹس شاہد جمیل خان اور جسٹس فیصل زمان خان کی تعیناتی کی مدت میں مزید ایک برس کی توسیع کرنے کی سفارش بھی کی ہے ۔جوڈیشل کمیشن نے لاہور ہائیکورٹ کے 13ایڈیشنل جج صاحبان کی کارکر دگی کا جائزہ لیا اور 12اپریل 2013میں بطور ایڈیشنل جج تعینات ہونے والے لاہور ہائیکورٹ کے جسٹس عاطرمحمود، جسٹس شاہد بلال حسن، جسٹس مس عالیہ نیلم اور جسٹس عابدعزیز شیخ کو مستقل کرنے کی سفارش کر دی، جوڈیشل کمیشن نے 12اپریل 2013میں تعینات ہونے والے ایڈیشنل جج جسٹس شہزادہ مظہر اور 22مارچ 2014کو بطور ایڈیشنل جج تعینات ہونے والے جسٹس شاہ خاور اور جسٹس سکندر ذوالقرنین کو کنفرم کرنے یا مدت ملازمت میں توسیع کے لئے نظر انداز کردیا جس کے باعث جسٹس شہزادہ مظہر 11اپریل جبکہ جسٹس شاہ خاور اور جسٹس سکند ر ذوالقرنین 22مارچ کو اپنے عہدوں سے سبکدوش ہوجائیں گے ۔کمیشن کے اجلاس میں ایڈیشنل جج جسٹس شعیب سعید کو کنفرم کرنے کے معاملے پر اس لئے غور نہیں کیا گیا کہ وہ 17مارچ کو ریٹائر ہورہے ہیں ۔ کمیشن نے جن 6ایڈیشنل ججوں کی تعیناتی میں مزید ایک برس کی توسیع کرنے کی سفارش کی ہے ، انہوں نے 22مارچ 2014کو اپنے عہدوں کا حلف اٹھایا تھا۔جوڈیشل کمیشن نے اپنی سفارشات منظوری کے لئے پارلیمانی کمیٹی برائے ججز کو بھجوا دی ہیں ۔

مزید : علاقائی


loading...