طبی مراکز میں ادویات اور عملے کی کمی کو دور کیا جائے،محمد ظہور

طبی مراکز میں ادویات اور عملے کی کمی کو دور کیا جائے،محمد ظہور

  



پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے اوقاف و حج اور مذہبی امور محمد ظہور نے دو آبہ،نریاب اور ٹل ضلع ہنگو میں صحت کی مناسب سہولیات نہ ہونے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ حکام کو ہدایت کی ہے کہ وہ فوری طور پر وہاں کے طبی مراکزمیں ادویات اورعملے کی کمی کو دور کریں تاکہ مقامی آبادی صحت بہتر سہولیات سے مستفید ہو سکیں۔انہوں نے کہا کہ ہم عوامیلوگ ہیں اور ہمیں عوامی مفاد انتہائی عزیز ہیں اور ہماری خواہش یہ ہے کہ قومی وسائل مفاد عامہ پر بروقت خرچ ہوں۔ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے اپنے دفتر پشاور میں ضلع ہنگو میں طبی سہولیات کی فراہمی کے سلسلے میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔معاون خصوصی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ منتخب نمائندہ ہونے کی حیثیت سے وہ اپنی یہ اولین ذمہ داری سمجھتے ہیں کہ وہ صوبہ بھر بالخصوص ضلع ہنگو کے عوام کے حقوق کا بھرپور تحفظ کرتے ہوئے انہیں حکومت کی جانب سے مناسب سہولیات فراہم کریں۔انہوں نے اس امر پر افسوس کا اظہار کیا کہ مذکورہ ضلع میں قائم صحت کے مراکز کو نظر انداز کیا گیا ہے جسے برداشت نہیں کیا جاسکتا۔انہوں نے دوآ بہ مرکز صحت کو جلد فعال کرنے کی بھی ہدایت کی۔ انہوں نے مزید کہا کہ حکومت عوام کو ہر شعبے میں ریلیف دینا چاہتی ہے اور حکومتی اداروں کی بھی ذمہ داری ہے کہ وہ حکومت اور عوام کی توقعات پر پورا اتریں۔دریں اثنا محمد ظہور نے فلاحی ادارے ایم ڈی ایم کے صحت کے حوالے سے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ ضلع میں کار خیر میں مصروف دیگر فلاحی تنظیمیں بھی مذکورہ ادارے کی پیروی کریں اور عوام کی خدمت کو اپنا مشن سمجھیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر