اسلامیہ کالج یونیورسٹی میں اساتذہ پر تشدد کیخلاف احتجاجی واک

اسلامیہ کالج یونیورسٹی میں اساتذہ پر تشدد کیخلاف احتجاجی واک

  



پشاور(سٹی رپورٹر)اسلامیہ کالج یونیورسٹی پشاور میں اساتذہ پر کیمپس پولیس کی جانب سے تشدد کے خلاف پشاور کیمپس کے تما م اساتذہ تنظیموں نے اسلامیہ کالج یونیورسٹی میں مشترکہ احتجاجی واک کیا جسمیں کثیر تعداد میں طلبہ نے بھی شرکت کی۔مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اٹھائے پولیس اور جامعہ انتظامیہ کے خلاف شدید نعرہ بازی کی۔مظاہرے میں تمام اساتذہ تنظیموں کے عہدیداران نے شرکت کی۔اس موقع پرمظاہرین کا کہنا تھا کہ پولیس کی جانب سے پر امن احتجاجی کیمپ پر کیپس پولیس کیجانب سے تشدد کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔شرکاء کا کہنا تھا کہ کالج انتظامیہ مسائل حل کرنے کے بجائے اساتذہ کو طاقت سے دبانے کی کوشش کر رہے ہے جو ایک امرانہ سوچ ہے۔انہوں نے کہا کہ کیمپس پولیس نے اساتذہ کی بے حرمتی کی جو اس قوم و ملت کا قیمتی سرمایہ ہوتا ہے۔واضح رہے کہ جامعہ میں پولیس کی جانب سے تشدد کے خلاف ٹیچنگ سٹاف ایسو سی ایشن نے کلاسز سے مکمل بایئکاٹ کا اعلان کیا ہے۔شرکاء نے مطالبہ کیا کہ اسلامیہ کالج یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر نوشاد خان فوری استعفی دے،جامعہ میں پچھلے پانچ سالوں میں بد عنوانی کی تحقیقات کرنے کیلئے جوڈیشل کمیشن بنایا جائے جبکہ آئی جی خیبر پختونخوا پولیس کی جانب سے اساتذہ پر تشدد کا نوٹس لیکر کیمپس پولیس کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے جبکہ کیمپس سے پولیس کا خاتمہ کیا جائے کیونکہ تعلیمی دراسگاہوں میں پولیس کا کوئی کام نہیں ہے ا ور دیگر مطالبات کے حل کیلئے انتظامیہ اقدامات کریں بصورت دیگر کلاسز سے بایئکاٹ جاری رہے گا۔مظاہرے میں پشاور یونیورسٹی ٹیچر ایسو ایشن،اگریکلچر ٹیچر ایسوسی ایشن اور انجیئرنگ یونیورسٹی ٹیچر ایسو سی ایشن کے عہدیداران نے شرکت کی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر