پاکستان میں ٹڈی دل کا خاتمہ،چین کا ایک لاکھ ’بطخوں کی فوج‘ بھیجنے کا منصوبہ

پاکستان میں ٹڈی دل کا خاتمہ،چین کا ایک لاکھ ’بطخوں کی فوج‘ بھیجنے کا منصوبہ

  



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) چینی اخبار نے دعویٰ کیا ہے کہ بیجنگ، پاکستان میں ٹڈی دل سے نمٹنے کے لیے ایک لاکھ بطخیں بھیجنے کا منصوبہ بنا رہا ہے۔خبر رساں ادارے اے پی کے مطابق ننگبو ایوننگ نیوز نامی مقامی اخبار کا کہنا ہے کہ چینی ماہروں کی ایک ٹیم نے پاکستان کا دورہ کیا اور ٹڈی دل سے نمٹنے کے لیے اپنی سفارشات میں ٹڈی دل کا مقابلہ کرنے کے لیے بطخیں تجویز کیں۔ ایک لاکھ بطخوں کی فوج چین کے مشرقی صوبے ججیانگ سے بھیجی جائیں گی۔اخبار کے مطابق چین نے دو دہائی قبل ٹڈی دل سے نمٹنے کے لیے اسی طریقہ کار کو اپنا جس کے خاطر خواہ نتائج مرتب ہوئے۔ اخبار نے جیانگ صوبائی انسٹی ٹیوٹ آف زرعی ٹیکنالوجی کے محقق لو لیزی کا حوالہ دے کر کہا کہ بطخوں کی قدرتی خوراک کیڑے ہیں اور وہ زہریلی ادویات کے مقابلے میں زیادہ موثر اور ماحول دوست ہیں۔محقق نے اپنے مقالے میں دعویٰ کیا کہ ٹڈی دل کا مقابلہ کرنے کے لیے بطخیں دیگر پولٹری مثلاً مرغیوں کے مقابلے میں زیادہ بہترفیصلہ ہے۔ بطخیں گروہ کی صورت میں رہتی ہیں مرغیوں کے مقابلے میں انہیں سنبھالنا زیادہ آسان ہے۔ ایک بطخ یومیہ 200 جبکہ مرغیاں صرف 70 ٹڈیاں کھاسکتی ہیں۔تاہم اس ضمن میں صوبائی حکومت کے محکمہ اطلاعات کی جانب سے خبر کی تصدیق نہیں ہوسکی اور ایگریکلچر سائنسز انسٹی ٹیوٹ کے محکمہ پبلیسٹی کا فراہم کردہ نمبر مسلسل مصروف رہا۔

ٹڈی دل

مزید : صفحہ اول