پی پی،(ن) لیگ کی طرح عمران حکومت بھی ناکام ہے،لیاقت بلوچ

پی پی،(ن) لیگ کی طرح عمران حکومت بھی ناکام ہے،لیاقت بلوچ

  



لاہور(نمائندہ خصوصی)نائب امیر جماعت اسلامی پاکستان اور سابق پارلیمانی لیڈر لیاقت بلوچ نے کہاہے کہ 72 سال میں فوجی آمرانہ نظام، ریاستی اداروں کی مدد سے بنایا سیاسی نظام اور پاپولر سیاست اور قیادت کے گرد عوام کے ہجوم کو اکٹھا کر دینے کا انجینئرڈ فارمولا ناکام ہوگیا ہے۔ پی پی پی، مسلم لیگ کی ناکامیوں کے بعد عمران خان حکومت بھی پہلے سے زیادہ بدتر نتائج کے ساتھ ناکام ہے۔ جمہوریت اور پارلیمانی نظام کے استحکام کے لیے ناگزیر ہے کہ سیاسی اور جمہوری قوتیں قومی ترجیحات پر قومی معاہدہ کریں۔ ریاستی ادارے انتخابات میں مداخلت کی بجائے شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات کا ماحول بنائیں اور نتائج قبول کریں، نیز تمام سٹیک ہولڈرز آئینی حدود اور دائرہ کار کی پابندی کریں۔ان خیالات کا ا َظہار انہوں نے لاہور میں معززین کے اعزاز میں استقبالیہ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ لیاقت بلوچ نے کہاکہ ٹرمپ نے پہلی مرتبہ کشمیر کی بات کی اس کے بعد نریند ر مودی نے مقبوضہ کشمیر پر فاشٹ حملہ کردیا اس پر امریکہ خاموش ہے۔ دوسری مرتبہ عمران خان کو دوست قرار دیا اور ناجائز اسرائیل کے دارالحکومت کو تل ابیب سے یروشلم منتقلی کے ساتھ صدی کی بدترین ڈیل فلسطینیوں کوآزادی کے حق سے محروم کرنے کے لیے مسلط کردی اب پھر ٹرمپ نے انڈیا میں پاکستان کا ذکر کیا ہے تو پاکستان میں پھر جھوٹی امیدیں وابستہ کی جارہی ہیں۔ انہو ں نے کہاکہ امریکہ دھوکے باز ہے، خطہ میں اس کی ترجیح بھارت ہے۔ عمران خان جب تک ملک کے اندر سیاسی، پارلیمانی اور اقتصادی استحکام نہیں لاتے، دنیا کی کوئی طاقت مدد نہیں کرے گی۔ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے متفقہ قومی کشمیر پالیسی اور اخلاص نیت کے ساتھ جہاد فی سبیل اللہ کے جذبوں سے جدوجہد ناگزیر ہے۔

لیاقت بلوچ

مزید : میٹروپولیٹن 1